The news is by your side.

Advertisement

دنیا کے لیے خوشخبری، خوراک محفوظ رکھنے والی ماحول دوست تھیلیاں‌ تیار

خواتین کا درد سر  ہوا دور، ماہرین نے ایسی تھیلیاں بنالی ہیں جن میں رکھے گئے پھل اور سبزیاں ایک ہفتے تک کھانے کے قابل رہتی ہیں، یہ ماحول دوست ہونے کے ساتھ جراثیم کش بھی ہیں۔

ایک غیر ملکی میگزین میں شائع رپورٹ کے مطابق ہارورڈ یونیورسٹی امریکا اور نانیانگ ٹیکنالوجیکل یونیورسٹی سنگاپور کے ماہرین نے مکئی کی باقیات سے ایسی ماحول دوست تھیلیاں تیار کی ہیں جو شفاف ہونے کے ساتھ پائیدار بھی ہیں اور ان میں رکھے گئے پھل اور سبزیاں ایک ہفتے تک محفوظ رہ سکتی ہیں۔

پلاسٹک جسی دکھائی دینے والی یہ تھیلیاں استعمال کے کچھ عرصے بعد خودبخود بے ضرر مادوں میں تحلیل ہوجاتی ہیں اور ماحولیاتی آلودگی میں اضافے کا سبب نہیں بنتیں۔

ان تھیلیوں کو ’الیکٹرو اسپننگ‘ طریقے کی مدد سے بنایا گیا اور اس کے لیے مکئی سے ایتھنول بنانے کے بعد بچ جانے والے مادے ’زین‘ کے علاوہ نشاستہ اور دوسرے قدرتی پولیمرز پر مشتمل ریشے (فائبرز) بھی استعمال کیے گئے ہیں۔

ان میں لپیٹی گئی غذا کسی خصوصی انتظام کے بغیر ہی کئی دنوں تک قابلِ استعمال حالت میں رہتی ہے۔ (فوٹو: این ٹی یو)

ابتدائی تجربے میں جب ان تھیلیوں میں تازہ اسٹرابیریز رکھی گئیں تو وہ ایک ہفتے تک قابل استعمال رہیں جس کے بعد ان میں پھپھوندی لگنا شروع ہوئی۔

تھیلیوں کی اضافی خصوصیت ان کا جراثیم کش ہونا بھی ہے کیونکہ جب ان میں رکھی گئی سبزیوں اور پھلوں سے گلنے سڑنے کا باعث بننے والے جراثیم خارج ہوتے ہیں تو جواباْ یہ تھیلیاں ان جراثیم کو ختم کرنے والے مادے خارج کرنے لگتی ہیں جس کی وجہ سے ان میں محفوظ کی گئی غذا کئی دنوں تک اچھی اور کھانے کے لیے قابل استعمال رہتی ہے۔

اس حوالے سے نانیانگ ٹیکنالوجیکل یونیورسٹی کی پروفیسر میری چین اور اس تحقیق کی مرکزی سائنسدان  کا کہنا ہے کہ ’’ان تھیلیوں کی طرح ہم غذائی اشیا کی پیکنگ کے لیے پائیدار اور ماحول دوست ٹیکنالوجی بھی وضع کرسکتے ہیں جو پھپھوندی اور جراثیم کو (محفوظ کردہ چیزوں) سے دور رکھے گی اور غذائی صنعت کے لیے انتہائی مفید ثابت ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں