اسمبلی میں آخری تقریر ہے، واپسی کا کوئی ارادہ نہیں، ارم عظیم فاروقی وام کے دروازے بند ہوں گے
The news is by your side.

Advertisement

اسمبلی میں آخری تقریر ہے، واپسی کا کوئی ارادہ نہیں، ارم عظیم فاروقی

کراچی : رکن سندھ اسمبلی ارم عظیم فاروقی نے کہا ہے کہ اسمبلی میں واپسی کا کوئی ارادہ نہیں کیونکہ میں دعوے سے کہتی ہوں کہ جب ووٹ لینے جائیں گے تو عوام کے دروازے بند ہوں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اپنی دھواں دار تقریر میں انہوں نے اپنی ناکامیوں کا برملا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آج ایوان میں بیٹھے ہر ممبر کو شرم آنی چاہیے، ہم اپنے عوام کو صاف پانی تک فراہم نہیں کرسکے،واٹر مافیا لوگوں کا پانی چرا کر ان کو وہی پانی فروخت کررہا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ آج یہ میری آخری تقریر ہے کیونکہ میرا اسمبلی میں واپسی کا کوئی ارادہ نہیں، اسپیکر آغا سراج درانی کے استفسار پر انہوں نے کہا کہ کہ کس منہ سے عوام کے پاس جائیں گے، دعوے سے کہتی ہوں کہ جب ووٹ لینے جائیں گے تو عوام کے دروازے ہم پر بند ہوں گے۔

ارم عظیم فاروقی نے کہا کہ صوبے سے کوٹہ سسٹم کو ختم کریں اور ہرچیز کو میرٹ پر لائیں، کوٹہ سسٹم جب تک ختم نہیں کریں گے ہم ایک نہیں ہوں گے۔

مزید پڑھیں: پارٹی میں موجود کالی بھیڑوں کی نشاندہی کرنے کی سزا ملی،ارم عظیم فاروقی

ارم عظیم نے کہا کہ مردم شماری میں ایک طبقے کو کم کردیا گیا، ایسا اس لئے کیا گیا کہ سندھ میں خوشحالی نہ آئے اور یہاں کے لوگوں میں اتحاد نہ ہو، لمحہ فکریہ ہے کہ تعلیم کے لحاظ سے پنجاب، کے پی کے بعد سندھ تیسرے نمبر پر ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں