The news is by your side.

Advertisement

نسل پرستی کے الزامات: ایسیکس کاؤنٹی کے چیئرمین کو لے ڈوبے

نسل پرستانہ زبان کے استعمال کے الزامات کے بعد انگلش کاؤنٹی کرکٹ کلب ایسیکس کے چیئرپرمین جان فیراگھر اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق جان فیریگھر نے خود پر عائد الزامات کو مسترد کرتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفیٰ دیا،ان پر 2017 کے اجلاس کے دوران نسل پرستانہ زبان کے استعمال کے الزامات لگے، اب اس بات کی بھی تحقیقات کی جائیں گی کہ ان الزامات کی اس وقت آزادانہ اور شفاف تحقیقات کیوں نہیں کی گئیں۔

حال ہی میں کلب کے چیف ایگزیکٹو کا عہدہ سنبھالنے والے جان اسٹیفنسن نے دو ٹوک موقف اپنایا کہ ایسیکس کاؤنٹی کرکٹ کلب میں کسی بھی قسم کے امتیازی سلوک کی کوئی گنجائش نہیں۔

یہ بھی پڑھیں: کپل دیو اور سنیل گواسکر بھارتی ٹیم پر برس پڑے

یہ الزامات ایک ایسے موقع پر سامنے آئے ہیں جب ایسیکس کے حریف کلب یارکشائر کو بھی نسل پرستی کے الزامات کا سامنا ہے، چند روز قبل اس بات کا انکشاف ہوا تھا کہ یارکشائر کے سابق کرکٹر عظیم رفیق کو کلب کے چیئرپرسن اور چیف ایگزیکٹو کے ہاتھوں نسل پرستانہ رویے کا سامنا کرنا پڑا تھا اور ہراساں بھی کیا گیا تھا۔

یارکشائر کلب کی نمائندگی کرنے والے انگلینڈ ٹیسٹ ٹیم کے کپتان جو روٹ نے بھی تبدیلی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ہیڈنگلے میں پیش آنے والے واقعات نے ہمارے کھیل کو نقصان پہنچایا۔

انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کے ترجمان نے کہا کہ ہمارے کھیل میں امتیازی سلوک یا نسل پرستانہ رویے کی کوئی گنجائش نہیں۔

انہوں نے کہا کہ انگلش کرکٹ بورڈ نے جان فیراگھر پر الزامات کی رپورٹ ملنے کے بعد انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے ایسکس کاؤنٹی کرکٹ کلب کے خلاف تحقیقات کا آغاز کردیا ہے اور اس کے نتیجے میں فیراگھر نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے کیونکہ انگلش بورڈ ان الزامات کو بہت سنجیدگی سے لے رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں