The news is by your side.

Advertisement

یورپی یونین کی جانب سے پی آئی اے پر عائد پابندی ختم ہونے کے امکانات روشن

اسلام آباد : یورپی یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی کی ٹیم آڈٹ کلیئرنس کیلئے رواں یا آئندہ ماہ پاکستان کا دورہ کرے گی ، جس کے بعد پاکستان اور یورپ میں پروازوں کا آغاز ممکن ہوسکے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی پروازوں کی یورپی ممالک میں آمد پر پابندی کے معاملے پر یورپی یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی ٹیم کی آڈٹ کے لئے پاکستان آمد رواں ماہ کے آخر یا اپریل کے شروع میں متوقع ہے۔

آڈٹ کلیئرنس پر پاکستان اور یورپ میں پروازوں کا آغاز ممکن ہوسکے گا ، سیفٹی اقدامات پر تحفظات کے باعث یورپ کے لیے پروازوں پر پابندی عائد ہے۔

یاد رہے رواں سال جنوری میں اکاؤ کی جانب سے سی اے اے پر سگنیفیکنٹ سیفٹی کنسرن ختم کرنے کے بعد قومی ایئرلائن پی آئی اے نے یورپی یونین ایئر سیفٹی ایجنسی سے یورپ اور برطانیہ جانے والی پروازوں سے پابندی ختم کرنے کی درخواست کی تھی۔

بعد ازاں یورپی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی نے جواب دیتے ہوئے پاکستانی طیاروں سے پابندی ہٹانے سے انکار کرتے ہوئے کہا تھا کہ اکاؤ آڈٹ کا یورپی روٹ پر پابندی سے کوئی تعلق نہیں۔

مراسلے میں کہا گیا تھا کہ پاکستانی ائیرلائنزسے پابندیاں ختم کرنے کے لیے ایاسا سی اےاے کا آڈٹ کرائے گی ، ایاسا آڈٹ کے بعد یورپی روٹ کی پابندیاں ختم کرنے کا حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔

ایاسا نے پی آئی اے کی جانب سے سیفٹی مینجمنٹ سسٹم کے اقدامات پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا ایاسا تیسرے ملک کے ذریعے پابندی اٹھانے کے لئے آڈٹ کراسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں