The news is by your side.

Advertisement

یورپی سیفٹی ایجنسی ‘ایاسا’ کا پاکستانی طیاروں سے پابندی ہٹانے سے انکار

کراچی : یورپی سیفٹی ایجنسی ایاسا نے پاکستانی طیاروں سے پابندی ہٹانے سے انکار کردیا اور کہا اکاؤ آڈٹ کا یورپی روٹ پر پابندی سے کوئی تعلق نہیں۔

تفصیلات کے مطابق یورپی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی نے پی آئی اے کے خط کاجواب دے دیا ، جس میں یورپی سیفٹی ایجنسی ایاسا نے اکاو آڈٹ پرپی آئی اے کی یورپی پروازوں پر پابندی ختم نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

خط ایاسا کے ایگزیکٹوڈائریکٹر نے سی ای اوپی آئی اے کو لکھا، جس میں کہا گیا ہے کہ اکاؤ آڈٹ کا یورپی روٹ پر پابندی سے کوئی تعلق نہیں۔

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ ایاسا اور اکاو آڈٹ کے بعد بھی سی اےاے کی کارکردگی کا جائزہ لےگی، پابندیاں ہٹانے کے لیے ایاسا متعلقہ حکام سےمشاورت کرے گا۔

پاکستانی ائیرلائنزسے پابندیاں ختم کرنے کے لیے ایاسا سی اےاے کا آڈٹ کرائے گی ، ایاسا آڈٹ کے بعد یورپی روٹ کی پابندیاں ختم کرنے کا حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔

ایاسا نے پی آئی اے کی جانب سے سیفٹی مینجمنٹ سسٹم کے اقدامات پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا ایاسا تیسرے ملک کے ذریعے پابندی اٹھانے کے لئے آڈٹ کراسکتا ہے۔

خط میں کہا گیا کہ پیشہ ورانہ لائسنس سے متعلق ایاسا حکام کی تحقیقات اب بھی جاری ہیں ، کورونا کے باعث ایاسا عملے کی سفری سرگرمیاں محدودہیں، کورونا صورتحال بہتر ہوتے ہی آڈٹ کرایا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں