ایران سے متعلق امریکا کی نئی پالیسی، یورپی یونین نے تحفظات کا اظہار کردیا
The news is by your side.

Advertisement

ایران سے متعلق امریکا کی نئی پالیسی، یورپی یونین نے تحفظات کا اظہار کردیا

لندن: امریکا کی جانب سے ایران کے حوالے بنائی گئی نئی حکمت عملی پر یورپی یونین نے تحفظات کا اظہار کردیا جبکہ سعودی عرب نے نئی پالیسی کی مکمل حمایت کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پامپیو نے گذشتہ روز ایران سے متعلق امریکا کی نئی پالیسی کا اعلان کیا تھا، علاوہ ازیں مائیک پومپیو نے یہ بھی کہا تھا کہ امریکا ایران پر تاریخ کی سخت ترین پابندیاں عائد کرے گا، پابندیوں کے بعد ایران کو اپنی معیشت کی بقا کا مسئلہ پڑ جائے گا۔

عالمی میڈیا کے مطابق یورپی یونین میں خارجہ پالیسی کی رابطہ کار فیڈریکا موگرینی نے امریکا پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایران جوہری معاہدے پر قائم رہے، جب تک ایران معاہدے کی پاسداری کرتا رہے اس وقت تک سمجھوتے کی شقوں پر عمل درآمد جاری رکھنا چاہیے۔


ایران، امریکا کی دھمکیوں اور دباؤ میں نہیں آئے گا: حسن روحانی


دوسری جانب جرمنی کے وزیر خارجہ ہائیکو ماس کا کہنا تھا کہ یورپی ممالک امریکا کے بغیر بھی ایرانی معاہدے کا نفاذ برقرار رکھنا چاہتے ہیں، ایران نے اگر دوبارہ جوہری پروگرام کا آغاز کیا تو اس سے خطرات جنم لے سکتے ہیں اسی لیے یورپ معاہدے پر مکمل قائم ہے۔

علاوہ ازیں برطانیہ کے وزیر خارجہ بورس جونسن نے جوہری معاہدے کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ دنیا کو ایران کے ایٹم بم سے محفوظ رکھنے والا سمجھوتہ ہے، اس سے دست برداری کے بجائے امریکا کو چاہیے کہ وہ اس میں دوبارہ شامل ہوکر دنیا کو ایٹمی خطرات سے محفوظ رکھے۔


امریکا،سعودی عرب اور یواےای‘ایران کے خلاف متحد


خیال رہے کہ سعودی عرب نے امریکی جانب سے ایران سے متعلق نئ پالیسی کے بعد مکمل حمایت کا اعلان کیا ہے، علاوہ ازیں جب امریکا نے ایران جوہری ڈیل سے دست برداری کا اعلان کیا تھا اس وقت بھی سعودی عرب امریکا کے ساتھ کھڑا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں