The news is by your side.

Advertisement

سابق وزیر داخلہ سندھ کے گرفتار کزنز احتساب عدالت میں پیش

سکھر: قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال کے گرفتار دونوں کزنز سمیت 3 ملزمان کو احتساب عدالت میں پیش کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں سرکاری زمینوں پر قبضے کے کیس کی سماعت جاری ہے، نیب نے سہیل انور سیال کے 2 کزنز شاہد سیال، سعید سیال، اور منھیل جتوئی کو گزشتہ روز گرفتار کیا تھا۔

احتساب عدالت نے تینوں ملزمان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا، ذرایع کا کہنا ہے نیب کی جانب سے ملزمان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی تھی۔

نیب نے تینوں ملزمان کو ضمانت رد ہونے پر سندھ ہائی کورٹ کے باہر سے گرفتار کیا تھا، ملزمان لاڑکانہ میونسپل کارپوریشن اور جنگلات کی زمینوں پر قبضہ کیس میں ملوث ہیں، ملزمان کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس بھی زیر سماعت ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر کے بعد نیب ٹیم کا عبدالرزاق بہرانی کے گھر پر چھاپہ

واضح رہے کہ گزشتہ روز نیب کا کہنا تھا کہ ملزمان ضمانت مسترد ہونے کے بعد عدالت سے فرار ہونے کی کوشش کر رہے تھے کہ اسی دوران انھیں اہل کاروں نے گرفتار کیا۔

ایک ہفتہ قبل نیب کی ٹیم نے وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر کے بعد ایک اور شخص عبدالرزاق بہرانی کے گھر پر بھی چھاپہ مارا، اور مختلف دستاویزات چیک کیں، اہم ریکارڈ تحویل میں لیا۔ بتایا گیا تھا کہ مشہور ٹھیکے دار عبدالرزاق کے گھر پر چھاپا اعجاز جاکھرانی کے گھر سے اہم ریکارڈ ملنے پر مارا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں