The news is by your side.

Advertisement

پرویز مشرف کا وطن واپسی کا فیصلہ، سپریم کورٹ کی طرف سے انتخابات میں حصہ لینے کی مشروط اجازت

لاہور: سابق صدر پاکستان جنرل (ر) پرویز مشرف نے وطن واپسی کا فیصلہ کرلیا، سپریم کورٹ نے انتخابات میں حصہ لینے کی مشروط اجازت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق عدالت نے پرویز مشرف کو کاغذاتِ نامزدگی جمع کرانے کی اجازت دیتے ہوئے کہا کہ وہ عدالت میں پیش ہوں تو الیکشن کمیشن میں ان کی نامزدگی کے کاغذات وصول کر لیے جائیں گے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے پرویز مشرف کی نا اہلی کے خلاف اپیل کی سماعت کرتے ہوئے کہا کہ وہ 13 جون کولاہور رجسٹری آجائیں، انھیں پیشی تک گرفتار نہیں کیا جائے گا۔

دریں اثنا آل پاکستان مسلم لیگ کے رہنما ڈاکٹر امجد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پرویز مشرف نے وطن واپسی کا فیصلہ کرلیا ہے، وہ انتخابات میں حصہ لیں گے، ان کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف سپریم کورٹ کے فیصلے کا احترام کریں گے۔

مقبوضہ کشمیر میں حق کے لیے لڑنے والے دہشت گرد نہیں بلکہ مجاہدین ہیں: پرویز مشرف


قبل ازیں سپریم کورٹ میں پرویز مشرف کی نا اہلی کے خلاف اپیل پر سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی، چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ یہ سید پرویز مشرف کون ہیں؟

سابق صدر کے وکیل قمر افضل نے عدالت کو بتایا کہ یہ سابق صدر اور سابق آرمی چیف ہیں، اس پر چیف جسٹس نے کہا کہ پرویز مشرف پاکستان آ جائیں، ہم ان پر لگی پابندی بھی ہٹادیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں