The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ کی انتخابی مہم کے سابق سربراہ پال فورٹ‌ کو 47 ماہ قید کی سزا

واشنگٹن : عدالت نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صدارتی مہم سابق مینیجر مینا فورٹ کو دھوکا دہی کے الزام میں تین سال آٹھ ماہ قید کی سزا سنا دی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹڑمپ کی سنہ 2016 میں صدارتی انتخابات کے دوران انتخابی مہم چلانے والے مینیجر مینا فورڈ پر ٹیکس کے معاملات, بینک سے دھوکا دہی اور یوکرائن میں لاکھوں ڈالر کی آمدن چھپانے کا الزام تھا جس کی سماعت کئی ماہ سے ریاست ورجینیا کی عدالت میں جاری تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ ٹرمپ کے قریبی ساتھی پال مینا فورٹ پر گزشتہ برس یوکرائن میں لاکھوں ڈالرز کی آمدن و اثاثے چھپانے پر ملزم قرار دیا گیا تھا۔

ورجینیا کی عدالت نے پال فورٹ کو تقریباً چار برس قید کی سزا سناتے ہوئے 50 ہزار ڈالر جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ استغاثہ نے عدالت سے 24 سال تک قید کی سزا سنانے کی درخواست کی تھی تاہم عدالت نے پال مینا فورٹ صرف 47 ماہ قید کی سزا سنائی۔

واضح رہے کہ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے سربراہ پال مینا فورٹ پر سیاسی مشاورت سے حاصل ہونے والی رقم کو یوکرائن میں مخفی رکھنے کا الزام صدارتی انتخابات میں روسی مداخلت کی تفتیش کے دوران عائد کی گیا تھا۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے پال مینا فورٹ نے عدالتی فیصلے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے رحم کی اپیل دائر نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ پال کو ایک ہفتے کے بعد ایک اور مقدمے میں سزا سنائی جائے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں