site
stats
بزنس

ایکسائز اہلکار قربانی کے جانور چیک نہیں‌ کرسکتے، صوبائی وزیر

Eid day

کراچی: صوبائی وزیر ایکسائز نے قربانی کے جانور لانے والے بیوپاریوں سے رشوت طلب کرنے کا نوٹس لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات مکیش کمار چاؤلہ نے صوبہ سندھ میں دیگر صوبوں یا صوبے کے مختلف علاقوں سے بڑے شہروں کی جانب قربانی کے جانور لانے والے بیوپاریوں سے ایکسائز اہلکاروں کی جانب سے رشوت طلب کرنے اور کاغذات کی چیکنگ کرنے کے بہانے سے بلاوجہ تنگ کرنے کی خبروں کا سخت نوٹس لیا ہے۔

انہوں نے ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کو ہدایت کی ہے کہ اس معاملے کی مکمل تحقیقات کریں اور ان واقعات میں ملوث اہلکاروں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کریں۔

صوبائی وزیر نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ایکسائز اہلکاروں کی ذمہ داری صوبے میں منشیات کو آنے سے روکنا ہے اور خفیہ اطلاع ملنے پر کارروائی کرنا ہے، قربانی کے جانور لانے والی گاڑیوں کی چیکنگ ان کے فرائض میں شامل نہیں ہے۔

انہوں نے غیر قانونی طور پر چیکنگ کرنے والے ایکسائز افسران اور اہلکاروں کو خبردار کیا کہ وہ فوری طور اپنی حرکات سے باز آجائیں بصورت دیگر ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

صوبائی وزیر مکیش کمار چاؤلہ نے کہا کہ گاڑیوں کے ٹیکس نادہندگان سے ٹیکس وصولی کے لیے روڈ چیکنگ مہم ہر سال تین سے چار مرتبہ کی جاتی ہے جس کا باقاعدہ اعلان کیا جاتا ہے اس کے علاوہ ایکسائز اہلکار گاڑیوں کے کاغذات چیک کرنے کے مجاز نہیں ہیں۔

انہوں نے عوام سے درخواست کی کہ وہ ان کالی بھیڑوں کی نشاندہی کریں جو محکمے کو بدنام کررہی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top