The news is by your side.

Advertisement

کویتی اقاموں کی توسیع سے متعلق بری خبر

کویت: کویتی حکام نے 60 سالہ غیر ملکیوں کے اقاموں کی توسیع روک دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزارت داخلہ میں رہائشی امور کی جنرل ایڈمنسٹریشن نے ساٹھ سال یا اس سے زیادہ عمر کے نان گریجویٹ تارکین وطن کے لیے اقاموں میں توسیع روک دی ہے۔

نئے احکامات سے قبل مذکورہ زمرے کے تارکین وطن کو اپنے کام اور رہائشی اجازت ناموں (اقاموں) کی تجدید کے عوض 250 دینار کی سالانہ فیس ادا کرنا اور ایک نجی کمپنی کی طرف سے جاری کردہ ہیلتھ انشورنس جس کی قیمت 503.500 دینار ہے کی اجازت دی گئی تھی۔

گزشتہ سال کے دوران ساٹھ سال یا اس سے زیادہ عمر کے تارکین وطن کو ان کے اقاموں کی میعاد ختم ہونے پر کئی بار توسیع جاری کی گئی تھی، واضح رہے کہ توسیع 30 سے ​​90 دن اور اس سے زیادہ دنوں کے لیے ہوتی ہے، تاکہ انھیں اقامہ خلاف ورزیوں کے جرمانے سے بچایا جا سکے، جس کی خلاف ورزی کے ہر دن کے لیے دو دینار لاگت آتی ہے۔

کویتی حکام کے مطابق اس زمرے کے لوگوں کے پاس اب دو ہی راستے ہیں یا تو نئے تقاضوں کے مطابق ورک پرمٹ کی تجدید کریں یا اگر بیٹا شرائط پر پورا اترتا ہے تو فیملی اقامہ پر منتقل ہوں کیوں کہ سرپرستی بیٹے کے ذریعے کی جاتی ہے۔

لیبر مارکیٹ سسٹم کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق تقریباً 9 ہزار غیر گریجویٹ تارکین وطن جن کی عمر 60 سال یا اس سے زیادہ ہے، مارچ اور ستمبر 2021 کے درمیان لیبر مارکیٹ چھوڑ چکے ہیں، جب کہ گزشتہ سال ستمبر کے آخر میں نجی شعبوں کو خیرباد کہنے والے اس زمرے کے تارکین وطن کی تعداد 62 ہزار 948 تھی، رواں سال کی پہلی سہ ماہی میں یہ تعداد بڑھ کر 72,060 تک پہنچ گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں