The news is by your side.

Advertisement

ننگرہار میں اسکول کے سامنے دھماکا، 9 طلبہ جاں بحق

ننگرہار: افغانستان کے صوبے ننگرہار کے علاقے لالوپر میں ایک اسکول کے سامنے دھماکے میں 9 بچے جاں بحق ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کی سرحد کے قریب افغانستان کے مشرقی صوبے ننگرہار میں ایک اسکول کے سامنے دھماکے کی زد میں آ کر نو طلبہ جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے، جب کہ 4 بچے زخمی ہو گئے ہیں۔

مقامی حکام کا کہنا ہے کہ دھماکا اس وقت ہوا جب کھانے پینے کا سامان فروخت کرنے والی ایک گاڑی ننگرہار صوبے کے ضلع لالوپر میں ایک پرانے اور بغیر پھٹے مارٹر گولے سے ٹکرا گئی۔

ننگرہار کے گورنر کے دفتر سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ زخمی بچوں کو صوبائی دارالحکومت جلال آباد کے علاقائی اسپتال میں علاج کے لیے لے جایا گیا۔

ننگرہار، انتہائی مطلوب دہشت گرد محمد خراسانی مارا گیا

الجزیرہ کے مطابق افغانستان کا شمار ان ممالک میں ہوتا ہے جہاں دہائیوں کی جنگ اور جھگڑوں میں سب سے زیادہ نہ پھٹنے والی بارودی سرنگیں اور دیگر اسلحہ موجود ہے، جب یہ بارودی مواد کا دھماکا ہوتا ہے تو اکثر متاثرین بچے ہوتے ہیں۔

صوبہ خراسان میں اسلامک اسٹیٹ نے اگست 2021 کے وسط میں طالبان کے ملک پر قبضہ کرنے کے بعد سے افغانستان میں کئی خوں ریز حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے، بشمول ننگرہار، جو اس کے سب سے عام اہداف میں سے ایک ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں