The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کی کوشش رنگ لے آئیں، سوشل میڈیا نے پولیو مخالف پوسٹیں ڈیلیٹ کردیں

اسلام آباد: وزیراعظم کے معاونِ خصوصی برائے انسداد پولیو بابر بن عطا نے کہا ہے کہ سوشل میڈیا پر پولیو ویکسین مخالف مواد کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے، فیس بک اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارم کی انتظامیہ نے 257 پوسٹیں حذف کردیں۔

بابر بن عطا کی جانب سے سوشل میڈیاپرپولیوویکسین مخالف موادکےخلاف کریک ڈاؤن کی تفصیلات جاری کی گئیں جس میں انہوں نے بتایا کہ سوشل میڈیاسےپولیوویکسین مخالف257لنکس ہٹائے گئے اسی طرح پاکستان کی درخواست پرفیس بک نے209 لنکس ، پوسٹیں ، گروپ اور پیجز ختم کیے۔ انہوں نے بتایا کہ یوٹیوب سےپولیومخالف33،ٹویٹرسے15لنکس ہٹادیئےگئے۔

معاونِ خصوصی برائے انسداد پولیو مہم کا کہنا تھا کہ پاکستان نے پولیوویکسین مخالف495لنکس بلاک کرنےکی درخواست کی تھی، سوشل میڈیا سے پولیو ویکسین مخالف138لنکس ہٹاناباقی ہیں انہیں بھی جلد ہی ہٹا دیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: حکومت کا سوشل میڈیا پر جاری پولیو مہم مخالف پروپیگنڈے پر کریک ڈاؤن کا فیصلہ

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ پشاور میں پولیو ویکسین کے خلاف ایک ڈرامائی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس کے بعد والدین نے خوف کی وجہ سے بچوں کو قطرے پلوانے سے انکار کردیا تھا اسی دوران سوشل میڈیا پر بھی ایک گروپ پولیو مخالف پروپیگنڈے کے لیے متحرک ہوگیا تھا۔

حکومت پاکستان نے فیس بک، ٹویٹر، یوٹیوب سمیت دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر شیئر ہونے والے مواد کی نشاندہی کرنے کے بعد انتظامیہ سے درخواست کی تھی کہ ایسے مواد کو ہٹایا جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں