گاڑی چِھننے کا معاملہ: فیصل واوڈا نے میئر کراچی کو نام نہاد وی آئی پی قرار دے دیا، معطل ایس ایچ او بحال -
The news is by your side.

Advertisement

گاڑی چِھننے کا معاملہ: فیصل واوڈا نے میئر کراچی کو نام نہاد وی آئی پی قرار دے دیا، معطل ایس ایچ او بحال

گاڑی چھن جانا لمحۂ فکریہ ہے، دیکھتے ہیں پولیس کیا کارروائی کرتی ہے: میئر کراچی

کراچی: شہرِ قائد کے میئر وسیم اختر کی سرکاری گاڑی چھن جانے کے معاملے میں مداخلت کرتے ہوئے تحریکِ انصاف کے رکن قومی اسمبلی فیصل واوڈا نے معطل ایس ایچ او کو بحال کروادیا۔

تفصیلات کے مطابق میئر کراچی کی سرکاری گاڑی چھن جانے کے بعد ڈی آئی جی جنوبی جاوید اوڈھو نے علاقے کے ایس ایچ او کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے معطل کردیا تھا، فیصل واوڈا نے مداخلت کرتے ہوئے مذکورہ ایس ایچ او کو بحال کروادیا۔

فیصل واوڈا نے بتایا کہ ایڈیشنل آئی جی کراچی امیر شیخ نے فیصلہ واپس لے لیا، نئے پاکستان میں معطلی کی یہ ڈرامے بازی نہیں چلے گی، مئیر، وزیرِ اعلیٰ، وزیرِاعظم، کو ئی بھی ہو، قانون سب کے لیے برابر ہوگا۔

پاکستان تحریکِ انصاف کے رہنما فیصل واوڈا نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ’کراچی پولیس چیف اور ڈی آئی جی کا شکریہ ادا کرتا ہوں، پولیس افسران نے عام آدمی اور نام نہاد وی آئی پی میئر کے خلاف فرق ختم کیا۔‘

انھوں نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ کے ذریعے اطلاع دی کہ ایس ایچ او کی معطلی کا حکم نامہ روک دیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایس ایچ او کو کار چور گینگ کی گرفتاری اور میئر کی گاڑی ریکور کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے۔


مزید پڑھیں:  کراچی جنوبی زون میں گاڑیاں چھیننے والوں نے سرکاری گاڑیوں کو ہدف بنا لیا


دوسری طرف میئر وسیم اختر نے اپنے دفتر کی سرکاری گاڑی چھن جانے پر اظہارِ تشویش کرتے ہوئے کہا کہ محرم سے قبل سرکاری گاڑی کا چھن جانا لمحۂ فکریہ ہے۔

وسیم اختر نے کہا ’ڈیفنس میں اسٹریٹ کرائم دن بہ دن بڑھ رہے ہیں، سندھ حکومت نے گاڑی کے سلسلے میں مجھ سے اب تک کوئی رابطہ نہیں کیا، ڈی آئی جی نے ایکشن لیا ہے، دیکھتے ہیں کہ کیا کارروائی ہوتی ہے۔‘

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں