The news is by your side.

Advertisement

اگر میں غلط ہوں تو مجھے بے شک پھانسی چڑھا دیں،نااہلی کیس میں فیصل واوڈا جذباتی ہوگئے

اسلام آباد : الیکشن کمیشن میں نااہلی کیس میں فیصل واوڈا جذباتی ہوگئے اور کہا اگر میں غلط ہوں تو مجھے بے شک پھانسی چڑھا دیں، جس پر ممبر پنجاب الطاف ابراہیم قریشی نے کہا آئندہ سماعت پر کسی فیصلہ تک پہنچیں گے۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن میں فیصل واوڈا نااہلی کیس کی سماعت ہوئی ، چیف الیکشن کمشنرکی سربراہی میں 4رکنی کمیشن نے سماعت کی۔

وکیل فیصل واوڈا نے بتایا کہ فیصل واوڈا کیخلاف درخواستیں مسترد کی جائیں اور وہ قومی اسمبلی کی سیٹ سےاستعفیٰ دے چکے لیکن کمیشن پہلے سے ہی مائنڈ بناکر بیٹھا ہے۔

جس پر ممبرالطاف ابراہیم قریشی نے کہا یہ کیا بات ہے کہ ہم مائنڈ بناکر بیٹھے ہیں ، ایک سال سے معاملہ زیر سماعت ہے ، مائنڈ بناکر بیٹھے ہوتے تو کیا کیس اتناوقت لیتے؟

فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ میری غلطی ہے تو پھانسی لگا دیں لیکن پہلے مجھے سنیں ، میرے خلاف سیاست کی گئی، بد نام کرنے کی کوشش کی گئی ، میرا پورا کیریئر ہے فیملی ہے میری ساکھ کونقصان پہنچایا گیا۔

چیف الیکشن کمشنر نے کہا واوڈا صاحب آپ کو پورا موقع دینگے ، پوائنٹ ٹوپوائنٹ بات کریں یا وکیل پہلے بولیں یا واوڈا صاحب۔

فیصل واوڈا کے وکیل بیرسٹر معید نے دلائل میں کہا الیکشن کمیشن کورٹ آف لانہیں ہے، الیکشن کمیشن ٹربیونل بنا سکتا ہے ، انکوائری کرسکتاہے، آر او، ٹربیونل میں فیصل واوڈا کے کاغذات نامزدگی چیلنج نہیں کئے گئے۔

وکیل کا کہنا تھا کہ فیصل واوڈا کاحلف نامہ بالکل درست ہے، ایک روپےکاجھوٹ نہیں بولا جبکہ فیصل واوڈا نے کہا اگر میں غلط ہوں تو مجھے بے شک پھانسی چڑھا دیں۔

جس پرممبر پنجاب نے کہا آپ اپنے الفاظ واپس لیں، اس پر پھانسی کا کوئی قانون موجود نہیں ، فیصل واوڈا نے مزید کہنا تھا کہ میرے ساتھ ویسا ہی سلوک کیا جائے جیسے درخواستوں پرماضی میں ہوتا رہا ، تو چیف الیکشن کمشنر نے کہا فیصل واوڈا صاحب آپ جذباتی ہورہے ہیں، آپ بیٹھ جائیں۔

وکیل درخواستگ زار نے کہا کیس کی فائل درخواست گزار قادر مندوخیل کے پاس ہے، ممبر پنجاب کا کہنا تھا کہ آپ پھر کیس کی سماعت ملتوی کرنے کی درخواست دے دیتے، ادر مندوخیل حلف نامہ پیش کردیں کہ یہ میرے وکیل نہیں۔

آوکیل کا کہنا تھا کہ آئندہ سماعت پر فیصل واوڈا کیخلاف درخواستیں غیر موثر ہونے پر دلائل دیں گے، ہم  درخواستوں پر دلائل دے چکے ، آج فیصل واوڈا نے نئی درخواست دی ہے۔

جس پرچیف الیکشن کمشنر نے کہا فیصل واوڈا کے قومی اسمبلی نشست پراستعفے کے بعد صورتحال تبدیل ہوگئی، الیکشن کمیشن نے درخواست گزاروں کو ہدایت کی کہ درخواستوں کے غیر مؤثر ہونے پر دلائل دیں۔

ممبر پنجاب الطاف ابراہیم قریشی نے کہا آئندہ سماعت پر کسی فیصلہ تک پہنچیں گے، جس کے بعد الیکشن کمیشن نے پیپلزپارٹی سینیٹ امیدوار کی درخواست پر جواب طلب کرتے ہوئے فیصل واوڈا نااہلی کیس کی سماعت 6 اپریل تک ملتوی کردی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں