The news is by your side.

Advertisement

ویڈیو اسکینڈل کی تفصیلات نے پاناما کیس کی یاد تازہ کر دی: فیصل واوڈا

لاہور: وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ ویڈیو کوئین نے اداروں کو لڑانے کی سازش کی، ویڈیو اسکینڈل نے پاناما کی یاد تازہ کر دی۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے اے آر وائی نیوز کے  پروگرام پاورپلے میں گفتگو کرتے ہوئے کیا. انھوں نے کہا کہ ن لیگ کوشواہدعدالت میں خود لے جانے چاہیے تھے، وہ نہیں گئے، اس لیے عدالت نے نوٹس لے کر اٹارنی جنرل کو طلب کر لیا، فریقین کے درمیان فریق نہیں بنیں گے.

ہمارے دور میں کابینہ اور وزیر اعظم آفس میں بھی اے سی بند ہوتے ہیں، ان کے دور میں نہاری پائے لینے بھی طیارہ جاتا تھا

فیصل واوڈا

وفاقی وزیر نے کہا کہ معاملےمیں قتل معاف کرانے والے مجرم بھی شامل ہیں ہیں، معاملے کی تفصیلات دیکھ کر پاناما کیس کا دور یاد آتا ہے۔

نواز شریف کی سیکیورٹی پر ایک ارب 77 کروڑ روپے خرچ کئے گئے، شریف خاندان کے گھر بھی سرکاری خرچے پر چلتے تھے.

فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ ہمارے دور میں کابینہ اور وزیر اعظم آفس میں بھی اے سی بند ہوتے ہیں، ان کے دور میں نہاری پائے لینے بھی طیارہ جاتا تھا، 777 کی سیٹیں بھی تبدیل کی گئیں، نواز دورمیں سرکاری طیاروں کو آن لائن ٹیکسی کی طرح چلایا گیا، جیسا کام ویسا ہی انجام ہوتا ہے، 35 سال لوٹ مار کرتے رہے.

مزید پڑھیں: حکومت، وزارت یا کرسی چلی جائے لیکن احتساب نہیں رکےگا، فیصل واوڈا

اس عرصے میں سال قانون کے ساتھ جو کھلواڑ ہوا، وہ سب کے سامنے ہے، حکومت میں جونواز دورکے لوگ رہ گئے، ان کو بھی سامنے لائیں گے، حسن اور حسین نواز ساڑھے600 کروڑ کے گھر میں رہتے ہیں.800 کروڑ روپے سیکیورٹی پر خرچ کردیےجائیں، تو اس کا خمیازہ کون بھگتے گا.

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نہیں رہے، مگر نواز شریف کے پاس آج تک 246 گاڑیاں تھیں، آصف زرداری صدر نہیں رہے پھر بھی 180گاڑیاں ان کے پاس رہیں، مشکل فیصلے بھی ہورہے ہیں اور اچھے کام بھی تیزی سے ہو رہے ہیں.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں