The news is by your side.

Advertisement

فیصل آباد کی سیاسی شخصیت پربہو کے قتل کا الزام

فیصل آباد : ذوالفقار آباد کی سیاسی شخصیت پر اپنی بہو کو زہر دینے کا الزام سامنے آیا ہے۔ مقتولہ ثمینہ کی والدہ نے الزام لگایا ہے کہ ن لیگ کے سٹی کونسل چیئرمین ملک مختار اوراس کے بیٹوں نے ہی میری بیٹی کوقتل کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فیصل آباد کے علاقے ذوالفقار آباد میں ایک خاتون کے قتل میں مقامی سیاسی شخصیت سٹی کونسل   کے وائس چئیرمین ملک مختار پر اس کی بہو مقتولہ ثمینہ کی والدہ نے قتل کا الزام عائد کیا ہے، ملک مختار کا تعلق نون لیگ سےہے۔

ثمینہ کی والدہ نے کہا ہے کہ ثمینہ کو اس کے شوہر رضوان اورجیٹھ بلال نے زہر دے کر مارا ہے۔ قتل میں ان کا والد بھی ملوث ہے۔

 ثمینہ کی والدہ کا رو رو کر برا حال ہے، ان کا کہنا ہے کہ بیٹی کو جس گھر بیاہ کر بھیجا تھا وہاں سے اس کی لاش آگئی، ثمینہ کو اس کے شوہر رضوان اور جیٹھ بلال نے زہر دے کر مارا ہے۔

ثمینہ اوراس کی بہن کی شادی دوسال قبل اپنے تایا سٹی کونسل کے وائس چئیرمین ملک مختار کے بیٹوں سے ہوئی تھی۔ دونوں بہنوں پر تشدد کیا جاتا تھا، ثمینہ کی بڑی بہن کو چند روز پہلے ہی خاوند نے گھر سے نکال دیا تھا۔

ثمینہ کابھائی کہتا ہے کہ سیاسی اثررسوخ کی وجہ سے ہمیں دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔ ثمینہ کے بھائی مزید نے بتایا کہ ثمینہ کو سسرال والے اولاد نہ ہونے کا طعنہ دیتے تھے، ملک مختار بھی میری بہن پر تشدد کرتا تھا، سسر سیاسی اثر و رسوخ رکھتا ہے اورہمیں سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دے رہا ہے۔

انہوں نے اپیل کی کہ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف ہمیں انصاف دلائیں، پولیس ذرائع کے مطابق مقدمے میں مقتولہ ثمینہ کے شوہر رضوان، جیٹھ بلال اور جیٹھانی صدف کا نام شامل کیا گیا ہے۔

واقعے کے بعد مقتولہ کے سسرال والے گھرکو تالے لگا کرفرار ہوگئے، پولیس کو کسی ملزم کی گرفتاری میں تاحال کوئی کامیابی نہیں ملی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں