The news is by your side.

Advertisement

فیصل آباد: پولیس اہلکار نے بچی کو اغواء کرلیا، باپ کی خودکشی کی دھمکی

فیصل آباد : پولیس اہلکار نے بیمار ماں کے پاس اسپتال جانے والی چودہ سالہ لڑکی کو اغواء کرلیا، انکوائری میں اے ایس آئی قصوروار ہونے کے باوجود سات ماہ بعد بھی سکیورٹی گارڈ کی بیٹی بازیاب نہ ہو سکی، مغویہ کے باپ نے وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہر خودکشی کرنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق فیصل آباد کے علاقے گٹی کے رہائشی سکیورٹی گارڈ گل ناصر شاہ نے آئی جی پنجاب کو دی گئی درخواست میں کہا ہے کہ اس کی چودہ سالہ بیٹی رضیہ سولہ مارچ کی رات اپنی بیمار ماں کے پاس الائیڈ اسپتال جاتے ہوئے راستہ بھول گئی۔

اسی دوران تھانہ ملت ٹاؤن کا اے ایس آئی حماد یوسف اور کانسٹیبل شہزاد گجر لڑکی کو اپنے ساتھ تھانے لے گئے جس کے بعد سے وہ لاپتہ ہے۔

ایس پی مدینہ ڈویژن کی انکوائری میں اے ایس آئی حماد یوسف کو لڑکی کے اغواء کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے اسے سخت سزا دینے کی سفارش کی گئی لیکن ابھی تک اس کے خلاف کوئی کارروائی کی گئی اور نہ ہی مغویہ کو بازیاب کروایا جاسکا ہے۔

انکوائری رپورٹ میں بچی کو بازیاب نہ کرنے پر تھانہ ملت ٹاؤن کے اس وقت کے ایس ایچ او رانا راشد اور تفتیش میں مجرمانہ غفلت برتنے پر اے ایس آئی سعید انور کے خلاف بھی محکمانہ کارروائی کی سفارش کی گئی لیکن اس کے باوجود سابق سی پی او افضال کوثر نے ایس ایچ او رانا راشد کو کو اہم بااثر سیاسی شخصیت کی ایما پر تھانہ بٹالہ کالونی میں ایس ایچ او تعینات کردیا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مغویہ کے والد گل ناصر کا کہنا ہے کہ اگر اس کی بیٹی بازیاب نہ ہوئی تو وہ لاہور جا کر وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہر خودکشی کر لے گا۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں