site
stats
پاکستان

فائرنگ سے نوجوان ہلاک، رانا ثناء کی خاتون اینکر سے غیرمہذبانہ گفتگو

فیصل آباد : مہندی کی تقریب میں وقاص نامی نوجوان کی فائرنگ سے ہلاکت کے واقعہ کی فوٹیج اے آر وائی نیوز کو موصول ہوگئی، سوال پوچھنے پر رانا ثناءاللہ نے خاتون اینکر سے غیرمہذبانہ انداز گفتگو اختیارکیا۔

تفصیلات کے مطابق 28نومبر کو پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناءاللہ کے شہر فیصل آباد میں دلہے کی فائرنگ سے وقاص نامی نوجوان جاں بحق ہوا تھا۔

حیدر آباد ٹاؤن کے رہائشی محنت کش لیاقت علی کا 20 سالہ بیٹا وقاص پیر کی رات محلہ عثمان غنی میں اپنے دوست یاسین کے دو بھائیوں وسیم اور امین کی مہندی کی تقریب میں شریک تھا کہ اچانک اندھا دھند فائرنگ شروع ہوگئی۔

واقعے کی فوٹیج دیکھیں

سات سے آٹھ افراد ہوائی فائرنگ کررہے تھے، اے آر وائی کو موصول فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ وقاص دولہا کی فائرنگ سے جاں بحق ہوا تھا۔

پانچ گولیاں فائر ہوئیں جبکہ آخری گولی پستول میں ہی پھنس گئی تھی، پھنسنے والی گولی فائر ہوکر وقاص کے سینے میں جا لگی، وقاص اسپتال پہنچنے سے قبل ہی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔

واقعے کے بعد دونوں بھائی گرفتاری کے خوف سے فرار ہوگئے تھے تاہم دو روز بعد ہی پولیس نے دونوں بھائیوں کو حراست میں لے لیا تھا۔

تھانہ غلام محمد آباد پولیس نے دلہے اور اُس کے بھائیوں کے خلاف مقدمہ درج کر کے شادی کے گھر سے چار افراد کو گرفتار کیا بعد ازاں مقتول وقاص کے والد لیاقت کی نشاندہی کے بعد چاروں افراد کو رہا کردیا گیا تھا۔

آپ نے یہ گھٹیا سوال کیا ہے،شرم آنی چاہیئے رانا ثناءاللہ

اس حوالے سے پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناءاللہ سے اے آر وائی نیوز نے خصوصی گفتگو کیلئے رابطہ کیا، سوال کرنے پرانہوں نے خاتون اینکر سے غیر مہذبانہ اندازِ گفتگو اختیارکیا۔

خاتون اینکر کی جانب سے رانا ثناءاللہ سے سوال کیا گیا تھا کہ آپ کے شہر فیصل آباد میں ہونے والی شادی میں ہوائی فائرنگ سے ایک شخص جاں بحق ہوگیا، کیا آپ کے اپنے شہر میں قانون کی کوئی عملداری نہیں ہے؟

جس پر موصوف نے کہا کہ آپ نے یہ گھٹیا سوال کیا ہے،انہوں نے یہ بھی کہا کہ بریکنگ نیوز کے چکرمیں گھٹیا گفتگو کرتے ہوئے آپ کو شرم آنی چاہئیے۔


مزید پڑھیں: فیصل آباد، مہندی کی تقریب میں فائرنگ، نوجوان جاں بحق


راناثناءاللہ کا مزید کہنا تھا کہ کہ آپ لوگ خود کوئی ایسا نظام بنالیں اور واقعے سے دو گھنٹے پہلے ہمیں بتادیا کریں، پنجاب کے وزیرقانون نے مزید کیا کہا ویڈیو دیکھیں۔

انہوں نے کہا کہ فیصل آباد صرف میرا شہر نہیں ہے، یہاں50لاکھ سے زائد لوگ رہتے ہیں، ملزم دلہا ہوا یا دلہا کا باپ گرفتار کرلیں گے، واضح رہے کہ وزیرقانون کو یہ بھی علم نہیں کہ مذکورہ واقعے کے ملزمان گرفتارہو چکےہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر ضرور شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top