معروف شیف فاطمہ علی کو لاہور میں سپرد خاک کر دیا گیا
The news is by your side.

Advertisement

معروف شیف فاطمہ کو لاہور میں سپرد خاک کر دیا گیا

لاہور : معروف شیف اور سابق اٹارنی جنرل اشتر اوصاف علی کی صاحبزادی فاطمہ کو لاہور میں سپردخاک کر دیا گیا، گذشتہ ہفتے فاطمہ علی کینسر کے باعث زندگی کی بازی ہار گئیں تھیں۔

تفصیلات کے مطابق معروف شیف اور سابق اٹارنی جنرل اشتر اوصاف علی کی صاحبزادی فاطمہ کی نماز جنازہ گلبرگ لاہور میں ادا کی گئی، جس میں چیف جسٹس پاکستان آصف سعید کھوسہ، سابق چیف جسٹس ثاقب نثار، سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کے جج صاحبان اور وکلاء کی بڑی تعداد شریک نے شرکت کی۔

نماز جنازہ میں سردار ایاز صادق، زعیم قادری اور پرویز ملک سمیت اہم سیاسی شخصیات بھی شریک ہوئیں۔

نماز جنازہ کے بعد سینکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں فاطمہ علی کو باغ رحمت قبرستان میں سپردخاک کر دیا گیا۔

یاد رہے 25 جنوری کو اشتر اوصاف علی کی بیٹی اور معروف شیف فاطمہ کا کینسر کے باعث انتقال ہو گیا تھا، وہ امریکہ میں مقیم تھی۔

مزیدپڑھیں :  پاکستانی شیف فاطمہ علی زندگی کی بازی ہار گئیں

خیال رہے فاطمہ علی مشہور شیف تھیں، جو اٹھارہ سال کی عمر میں امریکہ منتقل ہوئیں، فاطمہ علی نے امریکی ٹی وی شو ٹاپ شیف کے پروگرم میں حصہ لے کر ساتویں پوزیشن حاصل کی تھی۔

واضح رہے فاطمہ علی کو گزشتہ برس اکتوبر میں شدید دھچکا اُس وقت لگا تھا کہ جب اُن کی ’ایونگ سار کومہ‘ نامی نے انہیں واپس جکڑ لیا تھا اور ڈاکٹرز نے انہیں زندہ رہنے کے لیے ایک سال سے بھی کم وقت دیا تھا۔

اپنے آخری ٹوئٹ میں فاطمہ نے لکھا تھا کہ ’میں اپنی صحت سے متعلق آپ لوگوں کو آگاہ کرتی رہوں گی‘۔ لیکن بدقسمتی سے کچھ دیر قبل پاکستانی شیف کی دوست نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اطلاع دی کہ فاطمہ زندگی کی بازی ہار گئیں اور اب وہ ہمارے درمیان نہیں رہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں