The news is by your side.

Advertisement

غریب کہنے پر شہری نے منٹوں میں لاکھوں کی گاڑی خرید لی؟

بھارت میں کار شو روم کے سیلز مین کی جانب سے بے عزتی کیے جانے کے بعد کسان نے گاڑی خریدنے کے لیے آدھے گھنٹے میں دس لاکھ روپے اکٹھے کرلیے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق ریاست کرناٹک میں ایک کسان اپنے دوستوں کے ساتھ کار شو روم سے گاڑی خریدنے گیا تاہم سیلز مین نے اسے بھگا دیا اس کا خیال تھا کہ کسان اور اس کے دوست بس ٹائم پاس کرنے کے لیے آئے ہیں۔

سیلز مین نے کسان کی بے عزتی کرتے ہوئے کہا کہ اس کی جیب میں دس روپے بھی نہیں ہوں گے گاڑی کے لیے دس لاکھ روپے تو دور کی بات ہے۔

کسانوں کے گروپ نے بے عزتی کیے جانے کے بعد جاتے ہوئے سیلز مین کو چیلنج کیا کہ وہ اور اس کے دوست آدھے گھنٹے کے اندر ایس یو وی خریدنے کے لیے نقد رقم لے کر واپس آئیں گے۔

کیمپے گوڈا نامی شہری کے مطابق میرے چچا نے سیلز مین کو کہا کہ وہ دس لاکھ روپے دینے کو تیار ہیں کیا وہ فوری طور پر گاڑی دے دے گا جس پر جواب دیا گیا کہ آدھے گھنٹے میں مکمل کیش مل جائے تو وہ گاڑی ڈیلیور کردے گا۔

رپورٹ کے مطابق سیلز مین نے محسوس کیا کہ کسان کبھی بھی ایسا نہیں کرے گا کیونکہ اس دن بینکوں سے نقد رقم نکالنے میں بہت دیر ہوچکی ہوگی۔

آدھے گھنٹے بعد کسان دس لاکھ روپے لے کر واپس آیا اور گاڑی کا مطالبہ کیا لیکن سیلز مین گاڑی نہیں دے سکا اور دو دن کا وقت مانگنے لگا اس پر کسان نے مقامی پولیس میں شکایت درج کروادی۔

پولیس اہلکاروں کے سمجھانے کے بعد کسان نے کہا کہ وہ اب کار خریدنے میں دلچسپی نہیں رکھتا، شو روم کا سیلز مین میری اور دوستوں کی تذلیل کرنے پر تحریری معافی مانگے۔

واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہورہی ہے اور صارفین سیلز مین پر تنقید کررہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں