The news is by your side.

Advertisement

جے آئی ٹی رپورٹ منظر عام پر آنے سے کیس پر فرق نہیں پڑے گا: وفاقی وزیر قانون

اسلام آباد: وفاقی وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی رپورٹ منظر عام پر آنے سے کیس پر فرق نہیں پڑے گا۔ ملزمان کو سنے بغیر ان کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالا جا سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملزمان کو سنے بغیر ان کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالا جا سکتا ہے، وزارت داخلہ اور وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) لسٹ عدالت میں پیش کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ احتساب کا عمل اسی طرح چلنا چاہیئے۔ جے آئی ٹی رپورٹ منظر عام پر آنے سے کیس پر فرق نہیں پڑے گا۔ ملزمان کو اپنا دفاع پیش کرنے کا پورا پورا حق ہے۔

وفاقی وزیر قانون کا کہنا تھا کہ حکومتی نمائندوں کے خلاف ثبوت ملیں گے تو نام ای سی ایل میں ہوگا۔ نام تب ای سی ایل میں ڈالا جاتا ہے جب ملک سے فرار کا خدشہ ہو۔ حکومت ہر وہ کام کرے گی جس سے قانون کی حکمرانی ہو۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں