The news is by your side.

Advertisement

وزارت قانون نے عوام کی آسانی کےلئے پاکستانی قوانین ویب سائٹ پر جاری کر دیئے

اسلام آباد : وزیر قانون فروغ نسیم نے قیام پاکستان سے جمع شدہ آرکائیو کی اشاعت کے لئے ایپ لاؤنچ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا عوام کی آسانی کےلئے قوانین ویب سائٹ پر جاری کر دیئے اور کہا دیوانی مقدمات کے فیصلے اب ایک سے ڈیڑھ سال میں ہوجائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر قانون فروغ نسیم ،معاون خصوصی برائے اطلاعات ونشریات فردوس عاشق اعوان اور پارلیمانی سیکرٹری ملیکہ بخاری کے ہمراہ اپنی وزارت کی کار کر دگی کے حوالے سے میڈیا بریفنگ دی، پریس کانفرنس کے آغاز پر معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ گلے سڑے نظام کے ساتھ چھٹکارا چاہنے والوں نے عمران خان کو مسیحا کے طور پر چنا.، حکومت نے وہ ریفارمز متعارف کرائیں جو پاکستان کی ضرورت تھیں، زیر اعظم کی ٹیم نے عوام کے ووٹ کے ساتھ انصاف کیا ہے؟۔

وزیر قانون فروغ نسیم نے بتایا کہ سول پروسیجر میں ترمیم کو بل منظور ہوچکا ہے، تین اپوزیشن اراکین نے بھی بل کو سپورٹ کیا، سول ، دیوانی، زمینوں اور رینٹ مقدمات کے فیصلے اب سال ڈیڑھ سال میں ہوا کریں گے۔

فروغ نسیم نے کہاکہ پاکستان کےقوانین اب لامنسٹری کی ویب سائٹ پرموجودہیں، 1946 سے لے کر 2018 تک پاکستانی قوانین کی آرکائیو تیار کرلی گئی ہے، آرکائیو میں آٹھ سو چوالیس قوانین موجود ہیں ، ایپ کاوزیراعظم سےاجازت لےکرافتتاح کریں گے۔

خواتین کوحقوق کی ادائیگی کیلئے2ماہ کےاندرسہولتیں دی جائیں گی

وزیرقانون کا کہنا تھا کہ لاءڈویژن نے اس سال بائیس قوانین ڈرافٹ کیے، ان میں سے سات قوانین پاس ہوگئے ہیں، سی سی ایل سی میں تراسی کیسز ہم نے اپروو کیے، لاءمنسٹری کے پاس ہزاروں کنٹریکٹ اور اوپینینز آئے ، وزارت قانون صبح سے رات تک کام کرتی ہے۔

بےنامی پراپرٹی،ٹیکس چوروں کیلئے ایک کمیٹی بنائی جائےگی

فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ پاکستان کی50فیصدآبادی خواتین پرمشتمل ہے ، خواتین کوحقوق کی ادائیگی کیلئے2ماہ کےاندرسہولتیں دی جائیں گی ، خواتین کی شکایت پر پولیس فوری معاملے کی چھان بین کرےگی،اس قانون کے تحت خواتین کو پراپرٹی میں حق ملے گا۔

انہوں نے کہاکہ شواہد کیلئے الگ کمیشن بنےگا، ویڈیوسہولت بھی میسرہوگی، سی آرپی سی میں تبدیلی کے تحت دوسری اپیل نہیں کی جاسکےگی، سول پروسیجر میں ترمیم کا بھی بل تیار کیاگیاہے، بے نامی پراپرٹی،ٹیکس چوروں کیلئے ایک کمیٹی بنائی جائےگی اور بےنامی داروں کابتانےوالوں کانام صیغہ رازمیں رکھاجائےگا جبکہ بےنامی داروں کیخلاف کارروائی سےریکور رقم سے انعام بھی دیاجائے گا۔

نئے قانون کے متعارف کروانے کے بعد وراثت کا سرٹیفکیٹ 15 روز کے اندر جاری کیا جاسکے گا

وزیر قانون کاکہنا تھا کہ مستحق ناداراورغریب لوگوں کیلئےلیگل ایڈبنائی جائےگی، وراثت کاسرٹیفکیٹ15دن میں جاری کیاجاسکےگا، ویمن ایکشن پلان بل کی منظوری کیلئےاپوزیشن کا تعاون درکارہے، کرپشن کرکےبیرون ملک جانےوالے کیخلاف لیگل اسسٹنٹس کےتحت کارروائی ہوگی۔

فروغ نسیم نے کہاکہ نیب قوانین پر ترمیم سے متعلق نیب سے میٹنگ ہوئی ہے ،میری چیئرمین نیب سے بھی انٹریکشن رہی ہے، چیف جسٹس کی تجویزہےنیب کی ضمانت کاقانون ٹرائل کورٹ کو ہوناچاہیے ، پلی بارگین سے متعلق بھی سپریم کورٹ کی کچھ ہدایات ہیں، نیب کےپلی بارگین سےمتعلق قانون میں بھی ترمیم کی جائےگی ۔

نیب قوانین سے متعلق کچھ ترامیم ہیں جس پرمشاورت کی جائےگی

ان کا کہنا تھا کہ پرائیویٹ شخص کےخلاف نیب کی کارروائی ختم ہونی چاہیے، نیب میگاکرپشن اسکینڈلز کیخلاف بنا ان کا فوکس بھی اس پر ہوناچاہیے، نیب قوانین سے متعلق کچھ ترامیم ہیں جس پرمشاورت کی جائےگی۔

فروغ نسیم نے کہاکہ جج ارشد ملک کے حوالے سے ہمارے پاس ایکٹنگ چیف جسٹس کا آرڈر آیا تھا، چیف جسٹس ہائی کورٹ واپس آ گئے ہیں وہ کوئی نیا آرڈر کریں گے تو ہم عمل کریں گے۔

آخری وقت تک کشمیرکامقدمہ لڑاجائےگا

انھوں نے مزید کہا مقبوضہ کشمیرہم سب کے دل کے بہت قریب ہے، آخری وقت تک کشمیرکامقدمہ لڑا جائےگا، پاکستان کی جانب سےڈپلومیسی کاسلسلہ جاری ہے، ڈپلومیسی کا نتیجہ یہ نکلا کہ یواین سیکیورٹی کونسل نےاجلاس کیا، ایک مسئلہ کشمیر اور دوسراانسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں، بھارتی وزیردفاع راج ناتھ سنگھ کا بیان دھمکی کےمترادف ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں