The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹر فاروق ستار کا الیکشن لڑنے کا فیصلہ

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر رہنما ڈاکٹر فاروق ستار نے الیکشن لڑنے کا فیصلہ کرلیا اور این اے 245 اور 247 سے پارٹی ٹکٹ جمع کرا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر رہنما ڈاکٹر فاروق ستار نے الیکشن لڑنے کا اعلان کردیا اور این اے 245 اور 247 سے پارٹی ٹکٹ جمع کرا دئے جبکہ این اے 241 سے کاغذات نامزدگی واپس لے لیے۔

اس سے قبل میمن مسجد کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار کا کہنا تھا کہ عوام سےاپنےماضی میں کی غلطیوں پرمعافی مانگیں گے، یقین دلائیں گے ہم سب کوصرف عوام کی خدمت کرنی ہے، 10 سال سے ایک بوند اضافی پانی کراچی کو نہیں دیاگیا، کچرا اٹھانے کے اختیارات اور وسائل نہیں دیئے گئے، نکاسی آب کے وسائل، بلڈنگ کنٹرول کے اختیارات نہیں ملے۔

ایم کیو ایم کے سینئر رہنما نے کہا کہ 3 کروڑ سے زائد آبادی کے شہرمیں پبلک ٹرانسپورٹ نہیں، شہبازشریف بتائیں مسائل کے حل کیلئے اسمبلی میں آواز اٹھائی؟

ان کا کہنا تھا کہ کراچی سے جو بھی الیکشن لڑے ہم انہیں ووٹ نہیں دیں گے، مردم شماری میں ہمیں کم گنا گیا، آدھے شہر کی آبادی کو گم کر دیا گیا، شہبازشریف مردم شماری میں کم گنتی پر آواز اٹھائیں۔

فاروق ستار نے مزید کہا کہ شہری مطالبہ کریں یہاں کی مردم شماری درست ہونی چاہئے، حلقہ بندیاں غلط کی گئیں، 21 نہیں کراچی سے40 سیٹیں ہونی چاہئیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی 70 فیصد ٹیکس دے،واپس 2 فیصد ملے یہ ہمیں نہیں چاہئے،70 فیصد میں سے 35 پنجاب، 15 سے 20 دوسرے صوبوں کو جارہا ہے۔

رہنما ایم کیو ایم نے کہا کہ میمن مسجد میں 3لوگوں نے عوام سے ملاقات سبوتاژ کرنے کی کوشش کی، 3 لوگوں نے ہمارے خلاف پروپیگنڈا کیا وہ تینوں جماعت اسلامی کےتھے، جماعت اسلامی والے اگر یہ نہ کریں گے تو کون کرے گا۔

اس سے قبل فاروق ستار کا کہنا تھا 39سالہ سیاسی کیریئرمیں صرف عزت کمائی، الیکشن لڑنا ہے یا نہیں فیصلہ آج کروں گا، کچھ ساتھی اصرار کر رہے ہیں اور کچھ منع کر رہے ہیں، ذاتی رائے یہ ہے کہ الیکشن نہیں لڑنا چاہئیے، اگرالیکشن لڑنا ہوا تو حلقہ 245 اور 247سے لڑوں گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں