The news is by your side.

Advertisement

فاروق ستار کی گرفتاری: مسئلہ ضمانت کا نہیں سوچ کا ہے، خواجہ اظہار

کراچی: ایم کیوایم پاکستان کے رہنماء اور سندھ اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر اخواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ حکومت طےکرےوہ تیئس اگست کےاقدامات کےساتھ ہےیانہیں، مسئلہ فاروق ستار کی ضمانت کا نہیں بلکہ مخصوص سوچ کا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں گفتگو کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر سندھ نے کہا کہ حکومت 23 اگست کے اقدامات کے ساتھ ہے یا نہیں یہ اُسی کو طے کرنا ہے کیونکہ ہمارےلئے بائیس اگست کے مقدمات بے معنی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ فاروق ستار سمیت چالیس ہزار کارکنان پر 22 اگست سے پہلے کے مقدمات بنائے گئے ہیں، مسئلہ ضمانت کا نہیں بلکہ مخصوص سوچ کا ہے جب تک یہ سوچ ختم نہیں ہوگی مسائل حل نہیں ہوسکتے، اُن کا کہنا تھا کہ بے نظیر بھٹو کی شہادت پر بنائے جانے والے 40 ہزار مقدمات ایک حکم پر ختم کیے جاسکتے ہیں تو 22 اگست سے پہلے والے مقدمات ختم کیوں نہیں کیے جاتے،

شرجیل میمن کی گرفتار ی پر تبصرہ کرتے ہوئے خواجہ اظہار نے کہا کہ ایم کیو ایم کے اراکین اسمبلی کی گرفتاریوں کا واقعہ بھی پیش آیا، یہ کوئی منفرد واقعہ نہیں، ہم نے ہمیشہ عدالتوں کا احترام کیا اور مقدمات کا سامنا بھی کیا۔

خواجہ اظہار نے مزید کہا کہ 22 اگست سے پہلے بنائے جانے والے مقدمات کی پیروی کے لیے جب ہم عدالت پہنچتے ہیں تو وہاں کبھی تفتیشی افسر موجود نہیں ہوتا اور کبھی مدعی پیش نہیں ہوتا، وکلاء کی ٹییم نے فاروق ستار کو ضمانت قبل از گرفتاری لینے کا مشورہ بھی دیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں