The news is by your side.

Advertisement

خالدمقبول صدیقی جھوٹ بولیں لیکن حد رکھیں، فاروق ستار

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے کہا کہ خالدمقبول صدیقی نے مجھے افطار کی دعوت نہیں دی تھی،جھوٹ بولیں لیکن حد رکھیں، مسئلہ بہادرآباد والوں کی طرف سے ہے،میری پوری کوشش ہے ہم پھر ایک ہوجائیں۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے انسداد دہشت گردی کی عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھے افطار کی دعوت نہیں دی گئی تھی، خالد مقبول صدیقی جھوٹ بولیں لیکن کوئی حد رکھیں،سیاسی اکابرین اور عمائدین شہر سے جھوٹ بولا گیا۔

فاروق ستار کا کہنا تھا کہ قبل ازانتخابات دھاندلی کی نشاندہی کی ہے ،مسئلہ بہادر آباد والوں کی طرف سے ہے، میری طرف سے یکجا ہونے میں کوئی کسر نہیں ہے، پارٹی کی تقسیم کا تاثر نہیں دینا چاہتا، میری پوری کوشش ہےہم پھرایک ہوجائیں۔

سربراہ ایم کیو ایم پاکستان نے کہا کہ مجھے 5 مئی کے جلسے سے پہلے کچھ اور آفرکی گئی تھی اور جلسے کے بعد کچھ اور آفرز کی جارہی تھیں، 26 مئی کو  جنوبی سندھ صوبے کے لیے مظاہرے کا کہا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ انتخابات 2018کےشیڈول کا اعلان ہوگیا ہے، کارکنان سے کہا ہے چاہیں توکاغذات نامزدگی جمع کرائیں، میرے اپنے حلقےمیں ایک سیٹ کم کردی گئی ہے۔

فاروق ستار نے مطالبہ کیا کہ کاغذات نامزدگی جمع کرانےکی تاریخ بڑھائی جائے۔

یاد رہے گزشتہ روز ایم کیو ایم بہادر آباد کی جانب سے افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا تھا، جس میں تمام سیاسی جماعتوں کے قائدین ، سماجی ، مذہبی، ادبی، صحافتی شخصیات سمیت بیورو کریٹس، ، بلدیاتی نمائندگان اور سابق اراکین اسمبلی نے بھرپور شرکت کی۔

اس موقع پر ایم کیو ایم کے کنونیر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے بھی واضح کیا تھا کہ الیکشن کا کسی صورت بائیکاٹ نہیں کیا جائے گا، کسی سےانتخابی اتحاد نہیں لیکن سیٹ ایڈجسمنٹ پر بات ہوسکتی ہے، تحریک انصاف کا کراچی میں ووٹ بینک نہیں ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک’پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں