The news is by your side.

Advertisement

فاروق ستار کا 4 مئی کو ٹنکی گراؤنڈ میں جلسے کا اعلان

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے لیاقت آباد کے مختلف علاقوں اور ٹنکی گراؤنڈ کا دورہ کرتے ہوئے کہا کہ 4 مئی کو ٹنکی گراؤنڈ میں جلسہ کریں گے، 4 مئی کے جلسے کے لیے مجھے عوام سے ملنے جانا پڑا تو جاؤں گا۔

تفصیلات کے مطابق فاروق ستار نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے جلسے میں پورے سندھ سے لوگوں کو لایا گیا، ہم صرف ایف سی ایریا اور موسیٰ کالونی کے لوگ لائیں گے، بہادر آباد کے لوگوں کو بھی جلسے میں شامل کروں گا، میں انہیں منانے بہادر آباد بھی جاؤں گا۔

انہوں نے کہا کہ کراچی کو کچراچی بنانے والے ٹنکی گراؤنڈ آئے، یہ ہمارے گھروں پر قبضے کے لیے کرفیو لگا کر پولیس لے کر آئے، پیپلزپارٹی نے شہر کو 10 سال کچرے کا شہر بنادیا، زمینوں اور وسائل کو کس نے لوٹا؟ ہمارا فرض ہے کچرا صاف کریں ہم کچرے کا شہر بنانے والوں کو بھی صاف کریں گے۔

قبل ازیں ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی کو وہ سیٹیں بھی نہیں ملیں گی جو ان کی روایتی سیٹیں ہیں، الیکشن میں اپنی نشستوں کے ساتھ پیپلزپارٹی کی نشستیں بھی جیتیں گے۔

فاروق ستار نے کہا کہ ایک لاوا ہے جو اندر ہی اندر پک رہا ہے، نفرتوں کے بیچ بوئے گئے جو پھل نکلیں گے وہ نفرت کے ہی ہوں گے، ہم نفرتوں کی آگ پر پانی ڈال رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ممتاز بھٹو اور قوم پرستوں کو پیپلزپارٹی نے کھلی چھوٹ دی، اردو بولنے والوں سے جو سلوک کیا گیا اس پر معافی مانگنی چاہئے تھی، لوگوں کے دلوں کو جیتنا ہے یا زبردستی علاقوں پر قبضہ کرنا ہے۔

فاروق ستار نے کہا کہ ہم لوٹی ہوئی ایک ایک پائی سود کے ساتھ واپس لیں گے، کل پیپلزپارٹی کے زبردستی کرفیو لگا کر جلسہ کرنے کی مذمت کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں: پانی کے بحران پر کراچی میں فسادات ہوسکتے ہیں، چیف جسٹس کچھ کریں:‌ فاروق ستار

واضح رہے کہ فاروق ستار کا کہنا تھا کہ چیف جسٹس شہریوں کو ریلیف دلائیں، ہماری امیدیں اب بھی سپریم کورٹ سے وابستہ ہیں، شاید اب سپریم کورٹ ہی پانی کی فراہمی بہتر بناسکے، ورنہ اور کوئی امید نہیں، اپوزیشن جماعتیں اب کس کے در پر دستک دیں۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی بے حسی کا جواب ہم کیوں دیں، کراچی کے پیاسوں کو کسی طرح روزانہ پانی اور بجلی فراہم کی جائے یہ اہم مسئلہ ہے جبکہ ن لیگ اپنے رویے کی وجہ سے مزید تنہائی کا شکار ہوجائے گی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں