The news is by your side.

Advertisement

جعلی اکاؤنٹس کیس: نیب نے فریال تالپورکوگرفتارکرلیا

اسلام آباد: جعلی اکاؤنٹس کیس میں پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما فریال تالپور کو نیب نے گرفتار کرلیا ہے،  انکی رہائش گاہ کو سب جیل قراردے دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کی رہنما اورسابق رکن قومی اسمبلی فریال تالپور کو نیب کی پانچ رکنی ٹیم نے زرداری ہاؤس اسلام آباد سے گرفتار کرلیا ہے، جلد ان کا میڈیکل کروایا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر فریال تالپور کے طبی معائنے کے لیے میڈیکل بورڈ تشکیل دیا جارہا ہے ، میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کے بعد آئندہ روز انہیں احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا، اس موقع پر ان کی میڈیکل رپورٹ بھی پیش کی جائے گی۔

یہ بھی کہا جارہا ہے کہ چیئر مین نیب کی جانب سے ایک نوٹس جاری کیا گیا ہے جس کے تحت زرداری ہاؤس کے سامنے واقع فریال تالپور کی رہائش گاہ سب جیل قرار دیا گیا ہے اور یہیں ان کا میڈیکل کرکے کل انہیں احتساب عدالت لے جایا جائے گا۔

نیب کی5رکنی فریال تالپورکےگھرمیں موجود ہیں۔ ٹیم میں شیخ شعیب،مجتبیٰ خان،ارفع خان،علی ابڑو اور ایک خاتون رکن افشاں بشارت شامل ہیں۔ بتایا جارہا ہے کہ افشاں بشارت فریال تالپور کے ساتھ ہی رہیں گی۔

جعلی اکاؤنٹس کیس: نیب نے سابق صدر آصف زرداری کو گرفتار کرلیا

چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے آج وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کی منظوری دی تھی جس کے بعد سابق صدر آصف زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کی گرفتاری کے لیے نیب راولپنڈی کی ٹیم تشکیل دی گئی تھی۔

واضح رہے کہ دو روز قبل احتساب عدالت نے اسی جعلی اکاؤنٹ کیس میں گرفتار سابق صدر آصف علی زرداری کو 21 جون تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کیا ہے، نیب نے زرداری کے 14روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی تھی۔ اس کیس میں آصف زرداری،فریال تالپورکی عبوری ضمانت میں 6 بار توسیع کی جا چکی تھی۔

آصف زرداری اور فریال تالپور پر جعلی اکاؤنٹس کے ذریعے غیر قانونی طریقے سے رقم منتقلی کا الزام ہے، اس ضمن میں منی لانڈرنگ کیس احتساب عدالت میں زیر التوا ہے۔

یاد رہے کہ 10 جون کو جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف زرداری اور فریال تالپور کی عبوری ضمانت کی درخواستوں پر سماعت ہوئی تھی ، اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویژن بینچ نے درخواستوں پر سماعت کی تھی ۔

اس موقع پ رڈپٹی پراسیکیوٹرنیب سردارمظفراوراسپشل پراسیکیوٹرجہانزیب بروانا پیش ہوئے تھے جبکہ آصف زرداری کی جانب سے فاروق ایچ نائیک عدالت میں پیش ہوئے تھے ۔

عدالت نے دونوں فریقوں کی جانب سے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا اور کچھ دیر بعد فیصلہ سنایا گیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کی دونو ں اہم شخصیات کی ضمانت منسوخ کردی گئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں