The news is by your side.

Advertisement

تیز ترین انٹرنیٹ، سندھ کے لیے وفاق کی جانب سے بڑی خوش خبری

کراچی: سندھ کے مختلف اضلاع میں فائبر آپٹیکل کیبل بچھانے کے 2 الگ الگ معاہدوں پر دستخط کر دیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کمیونیکشن کے تحت سندھ کے لیے 3 ارب روپے کے دو منصوبوں پر دستخط کیے گئے ہیں۔

دونوں منصوبوں پر مجموعی لاگت 3 ارب روپے سے زائد آئے گی، جن کی تکمیل پر سکھر، خیرپور، گھوٹکی اور کشمور اضلاع کے مختلف علاقوں کی 140 یونین کونسلوں کے 47 لاکھ سے زائد افراد کو تیز ترین انٹرنیٹ کی سہولیات میسر آ سکیں گی۔

معاہدوں پر دستخط وزارت آئی ٹی کے ادارے یونی ورسل سروس فنڈ کے سی ای او حارث محمود چوہدری اور پی ٹی سی ایل کے قائم مقام سی ای او ندیم خان نے کیے۔

منصوبوں کی تکمیل سے مذکورہ اضلاع میں 5 مربع کلومیٹر کی حدود میں آنے والے 372 تعلیمی ادارے، 170 صحت کے مراکز، 217 سرکاری دفاتر اور 131 بینکوں کو تیز ترین انٹرنیٹ سے منسلک کیا جا سکے گا۔

وفاقی وزیر سید امین الحق کا کہنا تھا کہ سندھ کے دیہی علاقوں تک آئی ٹی خدمات پہنچانے کا عمل جاری ہے، سندھ میں 6 ارب روپے سے زائد رقم سے فائبر آپٹک کو پچھایا جارہا ہے۔

انھوں نے کہا حکومت ای پارلیمنٹ پر بھی کام کر رہی ہے، جون 30 کے بعد پارلیمنٹ میں ہر سیٹ پر ٹیلنٹ آویزاں ہوگا۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ کرونا وبا میں پاکستان کی آئی ٹی ایکسپورٹ میں اضافہ ہوا ہے، سال 2018۔19 میں آئی ٹی ایکسپورٹ 99 کروڑ 50 لاکھ ڈالر تھی، جب کہ سال 2019۔20 میں ایکسپورٹ 1 ارب 23 کروڑ ڈالر ہو گئی، آئی ٹی کی ایکسپورٹ میں 24 فی صد اضافہ ہوا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں