The news is by your side.

Advertisement

فاٹا انضمام کے حق میں ہزاروں قبائلی ڈی چوک پہنچ گئے

اسلام آباد : فاٹا کے خیبر پختونخوا سےانضمام کیلئے اسلام آباد نیشنل پریس کلب کے باہر ریلی نکالی گئی، ریلی میں خیبر پختونخوا کی مختلف سیاسی جماعتوں کے کارکنان شریک تھے، ریلی کےشرکاء رکاوٹیں عبور کرتے ہوئے ڈی چوک پہنچ گئے، وزیر اعظم نے اٹجاج کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو مذاکرات کی ہدایت کردی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں کارکنوں نے فاٹا اصلاحات کے حوالے سے ڈی چوک اسلام آباد میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔

مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ فاٹا کو فوری طور پر خیبر پختو نخوا کا حصہ بنایا جائے، مظاہرین نے احتجاجی بینرز بھی اٹھا رکھے تھے۔ مشتعل مظاہرین نے اپنے مطالبےکے حق میں بھرپور نعرے بازی کی۔

مظاہرین کے احتجاج کی ویڈیو دیکھیں 

ان کا مطالبہ ہے کہ ایف سی آر کا خاتمہ کیا جائے، اور فاٹا کو کے پی کے میں شامل کیا جائے۔


مزید پڑھیں: فاٹا کوقومی دھارے میں لانےکیلئے قانون سازی تیزکی جائے، وزیراعظم


اس موقع پر پولیس اور مظاہرین کے درمیان تلخ جملوں کا بھی تبادلہ ہوا، پولیس نے مظاہرین کو روکنے کیلئے چائنا چوک پر خاردار تاریں لگا رکھی تھیں لیکن کسی رکاوٹ کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے مظاہرین پولیس اہلکاروں کو دھکے دیتے ہوئے آگے بڑھتے رہے۔

وزیراعظم نے قبائلی افراد کے احتجاج کا نوٹس لے لیا

 دوسری جانب  وزیراعظم شاہد  خاقان عباسی نے ہزاروں قبائلی افراد کے اس احتجاج کا نوٹس لیتے ہوئے فاٹا اراکین کے تحفظات  دور کرنے کی ہدایت کردی ہے، اورساتھ ہی انہوں نے متعلقہ اعلیٰ قیادت کو قبائلی رہنماؤں سے مذاکرات کا بھی حکم دے دیا ہے۔


مزید پڑھیں: فاٹا کو ضم کرنے میں‌ فضل الرحمن اور اچکزئی رکاوٹ ہیں، عمران


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں