فاٹا انضمام بل کا فوری اطلاق: نگراں وزیراعظم نے فاٹا عوام کے دھرنے کا نوٹس لے لیا -
The news is by your side.

Advertisement

فاٹا انضمام بل کا فوری اطلاق: نگراں وزیراعظم نے فاٹا عوام کے دھرنے کا نوٹس لے لیا

متحدہ قبائل پارٹی کی جانب سے اسلام آباد میں دھرنا، شرکا نے فاٹا میں بھی انتخابات کا مطالبہ کردیا

اسلام آباد: فاٹا انضمام بل کے انتخابات سے پہلے اطلاق کے سلسلے میں فاٹا عوام کے دھرنے کا نگراں وزیر اعظم ناصر الملک نے نوٹس لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق فاٹا عمائدین نے اسلام آباد پریس کلب کے باہر فاٹا عوام کے دھرنے میں مطالبہ کیا کہ فاٹا انضمام بل کا اطلاق انتخابات سے پہلے کیا جائے۔

اسلام آباد دھرنے میں فاٹا کے عمائدین اور لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی، یہ دھرنا متحدہ قبائل پارٹی کے زیرِ اہتمام کیا جا رہا ہے۔ احتجاج کرنے والے دھرنا منتظمین کا کہنا ہے کہ فاٹا میں بھی انتخابات کرائے جائیں۔

دریں اثنا نگراں وزیر اعظم ناصر الملک نے فاٹا میں انتخابات کرانے کے مطالبے اور بل کے فوری اطلاق کے لیے منعقد کیے جانے والے دھرنے کا نوٹس لے لیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم ہاؤس سے دھرنے کے قائدین سے رابطہ کیا گیا ہے، وزیر اعظم کی جانب سے پریس کلب پر دھرنا دینے والوں کو کل بات چیت کی پیش کش کی گئی۔

ذرائع کے مطابق متحدہ قبائل پارٹی کے قائدین کل حکومت سے بات چیت کریں گے، اس بات چیت میں دھرنے کے دیگرعمائدین بھی شریک ہوں گے۔

قبائلی عمائدین نے وزیر اعظم ہاؤس سے ہونے والے رابطے کے متعلق کہا کہ وزیر اعظم ہم سے بات کرنا چاہ رہے ہیں، امید ہے کل مثبت پیش رفت ہوگی۔

چترال، فاٹا انضمام کی حمایت میں ریلی


عمائدین کا بات چیت کے سلسلے میں واضح طور پر کہنا ہے کہ وہ انتخابات اور بل کے فوری اطلاق کے مطالبات منوائے بغیر دھرنا چھوڑ کر واپس نہیں جائیں گے۔

عمائدین نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے فاٹا میں صوبائی اسمبلی انتخابات میں بالکل بھی تاخیر نہ کی جائے اور بلدیاتی انتخابات بھی بر وقت کرائے جائیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں