The news is by your side.

Advertisement

‘ایف اےٹی ایف اور نیشنل ایکشن پلان پرحکومت کی ضرورت پوری کریں گے’

اسلام آباد: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ایف اےٹی ایف اور نیشنل ایکشن پلان پر حکومت کی ضرورت پوری کرنے کا اعلان کردیا۔

قومی اسمبلی میں مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان کی جانب سے عالمی عدالت انصاف نظرثانی و غور مقرر آرڈیننس 2020 ایوان میں پیش کیے جانے پر اظہار خیال کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ ایف اےٹی ایف اور نیشنل ایکشن پلان پر حکومت کی ضرورت پوری کریں گے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ اپوزیشن اور حکومت کو اتفاق رائے سے قانون سازی کرنی ہوگی، درخواست ہے قانون سازی سے متعلق کمیٹی میں ان بلز کو بھیج دیں۔

چیئرمین پی پی نے کہا کہ بابر اعوان کوپتہ ہے یہ ہمارے ساتھ کام کرتے رہے کیا آپ ہمیں پیغام دے رہے ہیں کہ آپ اتفاق رائے میں سنجیدہ نہیں اگر سنجیدہ نہیں تو پھر ہم کیوں مل کر چلیں؟

قومی اسمبلی میں بابر اعوان نے عالمی عدالت انصاف نظرثانی و غور مقرر آرڈیننس 2020 اور اینٹی منی لانڈرنگ بلز ایوان میں پیش کیے۔

بابر اعوان نے کہا کہ اپوزیشن نے الزام لگایا تھا آرڈیننس کلبھوشن کو فائدہ دینے کے لیے لایا گیا گزشتہ ہفتے آرڈیننس ایجنڈے میں شامل ہونے کے باوجود بل پیش نہیں ہو سکا۔

انہوں نے کہا کہ اتفاق رائےسے قانون سازی کےلیےکمیٹی میں معاملات جا رہے ہیں، بل ڈیڑھ سال سے التوا کا شکار تھےتو کچھ نہیں ہوا، طریقہ کارپرعمل نہیں کیا گیا تو بل پھر تاخیر شکار ہوتے رہیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں