The news is by your side.

Advertisement

باپ بیٹے نے تھری ڈی پرنٹر کے ذریعے لیمبورگینی بنا ڈالی

واشنگٹن: امریکا سے تعلق رکھنے والے باپ بیٹے نے تھری ڈی پرنٹر کے ذریعے لیمبورگینی بنا ڈالی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکا میں باپ بیٹے نے تھری ڈی پرنٹر کے ذریعے لگژری کار لیمبورگینی بنائی ہے جس کی مالیت 4 لاکھ ڈالر بتائی گئی ہے۔

اسٹیرلنگ بیکس اور ان کے 11 سالہ بیٹے زیندر ایک سال سے اطالوی سپر کار کے ماڈل پر کام کررہے ہیں جو اب تکمیل کے آخری مراحل میں ہے۔

ایک روز اسٹیرلنگ سے ان کے بیٹے زیندر نے کہا کہ کیا ایسا ممکن ہے کہ ہم تھری ڈی پرنٹر ٹیکنالوجی کی مدد سے لیمبورگینی بنائیں۔

اسٹیرلنگ نے بیٹے کی خواہش پر اپنی مہارت سے اس منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کے لیے کام کا آغاز کیا۔

اس گاڑی کو مکمل طور پر لیمبورگینی نہیں کہا جاسکتا لیکن اس میں لیمبورگینی کے کچھ مستند حصے استعمال کیے گئے ہیں جو اس گاڑی میں زیادہ تر استعمال ہوتے ہیں۔

باپ بیٹے اپنی تیار کردہ گاڑی میں ٹیسٹ ڈرائیور پر بھی گئے، اسٹیرلنگ کا منصوبہ ہے کہ وہ اپنے بیٹے کے ساتھ اسکول میں لیمبورگینی بھیجیں تاکہ ان کا بیٹا بچوں کو اس بارے میں بتاسکیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں