site
stats
پاکستان

باپ اوربھائی نے خراب روٹی بنانے پرکمسن لڑکی کوقتل کردیا

لاہور: شاد باغ کے علاقے میں باپ اور بھائی نے کمسن لڑکی کو خراب روٹی بنانے کی پاداش میں قتل کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ساتویں جماعت کی طالبہ 12 سالہ انیقہ کی نعش چند روزقبل میواسپتال کے قریب سے برآمد ہوئی تھی۔

انیقہ کو قینچی اور سلاخوں سے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا جس کے سبب وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسی
تھی۔

پولیس نے قتل کی تفتیش شروع کرکے کمسن مقتولہ کے والد خالد اور بھائی ابوذرکو بھی شامل تفتیش کیا۔

دونوں ملزمان پولیس کی حراست میں ہیں اوردورانِ تفتیش انہوں نے بیان دیا کہ خراب روٹی بنانے پر طیش میں آکر انہوں نے انیقہ کو قتل کردیا۔

اس حوالے سے معروف سماجی رہنما فرزانہ باری نے اے آروائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے معاشرے میں مرد عورتوں کو اپنی ذاتی ملکیت تصورکرتے ہیں اسی لئے اس نوعیت کے اندوہناک واقعات پیش آتے ہیں، اس معاملے میں اس ذہنیت کو بدلنے کی ضرورت ہے۔

ممتاز مذہبی عالم مفتی عمیر نے اے آروائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئےواقعے کی شدید مذمت کی اور کہا کہ اسلام اس قسم کی واقعات کی ہرگز اجازت نہیں دیتا اور ایسے واقعات عدالتی نظام کی کمزوری کے سبب پیش آتے ہیں اگر مجرموں بروقت سزا دے کر عبرت کا نشانہ بنایا جائے تو ایسے پرتشدد واقعات کی روک تھام عین ممکن ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top