The news is by your side.

Advertisement

لاہورمیں بچوں کا اغوا‘ باپ نے بیٹے کو قتل کرکے لاش نہر میں بہادی

لاہور : باپ نے دوسری بیوی کے کہنے پر پانچ سالہ بیٹے کو قتل کر کے لاش نہر میں پھینک دی، واضح رہے کہ لاہور میں بچوں کے اغوا کے واقعات تشویش ناک حد تک بڑھ چکے ہیں‘ رواں سال ایک ہزار سے زائد بچے اغوا ہوچکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے علاقے شالیمار سے اسد اللہ نامی شخص نے اپنے کمسن بچے کے اغوا کا مقدمہ درج کرایا تھا، بچے کی عمر پانچ سال اور نام محمد احمد تھا۔

پولیس نےتحقیقات شروع کی تو بچے کے باپ پر شبہ ہوا کہ جس کے نتیجے میں اسد اللہ کو حراست میں لیا گیا جہاں دورانِ تفتیش اس نے اپنے بیٹے کو خود قتل کرنے کا اعتراف کیا ۔

ملزم کے مطابق اس نے اپنی دوسری بیوی کے بہکانے پر اپنے کمسن بچے کو قتل کرکے اس کی نعش نہر میں بہادی‘ پولیس نے احمد کی لاش کی تلاش شروع کردی ہے۔

پولیس کے مطابق اغوا کے پہلے سے درج شدہ مقدمے میں ترمیم کی جائے گی اور ملزم اسد اللہ کے خلاف دفعہ 302 کے تحت مقدمہ درج کیا جائے گا۔

واضح رہےکہ لاہور میں بچوں کے اغوا کے واقعات خطرناک حد تک بڑھ چکے ہیں اور رواں سال لاپتہ ہونے والے بچوں کی تعداد ایک ہزار سے تجاوز کرگئی ہے‘ پنجاب حکومت کے مطابق ان اعداد وشمار میں زیادہ تر تعداد ان بچوں کی ہے جو گھریلو ماحول سے تنگ آکر گھر سےفرار ہوئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں