The news is by your side.

Advertisement

فواد چوہدری کی نیب سے متعلق بیان پر وضاحت

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ احتساب سے متعلق بیان کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب سے متعلق بیان پر وفاقی وزیر فواد چوہدری کا اعلامیہ جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ فوادچوہدری کے بیان کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا کیونکہ وفاقی وزیر نے یہ بات نہیں کہی کہ احتساب براہ راست تحریک انصاف کی حکومت کررہی ہے۔

اعلامیے میں فواد چوہدری کے بیان کا مفہوم بیان کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ عمران خان کی حکومت سے قبل کرپشن کو کوئی بڑا مسئلہ نہیں سمجھا جاتا ہے، ماضی میں کھلے عام کہا جاتا تھا “کھاتا ہے تو لگاتا بھی ہے”،  عمران خان کےسیاست میں قدم جمانےکےبعدہی احتساب ممکن ہوا، اس لیے اداروں نے غیرجانبداری سے احتسابی عمل کا تیزی سے آغاز کیا۔

مزید پڑھیں: نیب نے فواد چوہدری کے بیان کا نوٹس لے لیا، کارروائی کی ہدایت

ترجمان کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے کے مطابق فوادچوہدری کابیان بدعنوانی کے خلاف پی ٹی آئی کےسیاسی بیانیےکا اعادہ تھا، لہذا اسے اداروں کے دائرہ کار میں مداخلت کی کوشش نہ سمجھا جائے، وفاقی وزیراداروں کا احترام اور دائراہ کار میں مداخلت پریقین نہیں رکھتے۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ فواد چوہدری نیب کی جانب سے کی جانے والی کاوشوں کے معترف ہیں اور وہ بدعنوانی کے خلاف قومی احتساب بیورو کی بلا خوف کارروائیوں کو سراہتے بھی ہیں۔

واضح رہے کہ فواد چوہدری نے دو روز قبل نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ احتساب ہم کررہے ہیں نیب نہیں کررہی، چیئرمین نیب نے اس بیان کا نوٹس لیتے ہوئے وفاقی وزیر کے خلاف قانونی کارروائی کی ہدایت جاری کی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں