وزیراعظم نوازشریف کو اب معجزہ ہی نااہلی سے بچاسکتا ہے، فواد چوہدری -
The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم نوازشریف کو اب معجزہ ہی نااہلی سے بچاسکتا ہے، فواد چوہدری

اسلام آباد : پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نوازشریف کو اب معجزہ ہی نااہلی سے بچاسکتاہے، معاملہ نوازشریف اوران بچوں کی چودہ سال سزا تک جارہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے ترجمان فواد چوہدری نے سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کے وکیل نے مقدمہ نیب کورٹ کو بھیجنے کی بات کی، وزیراعظم نوازشریف کو اب معجزہ ہی نااہلی سے بچاسکتا ہے، نوازشریف کی نااہلی اب دیوار پر لکھی نظر آرہی ہے.

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ نوازشریف جب بھی اقتدار میں آئے ، جائیدادوں میں بے شمار اضافہ ہوا، نوازشریف کی گرینڈ گڈ بائی کیلئے پی ٹی آئی جشن کا اہتمام کرے گی، پی ٹی آئی اور پاکستان کے عوام جشن کی تیاری کریں۔

پی ٹی آئی کے ترجمان نے کہا کہ شریف خاندان نے کرپشن کرکے پیسہ لوٹا اور ملک سے باہر لےگئے، بنی گالہ سے جو جو سوال پوچھا گیا اس کا جواب دے رہے ہیں، عدالت میں تسلیم کیا ایف زیڈ ای کمپنی نوازشریف کی ہے،ان کے پاس اب کچھ نہیں، ٹائیں ٹائیں فش ہوگیا ہے۔

انھوں نے کہا لیگی رہنماؤں نے جھوٹ میں پی ایچ ڈی کررکھی ہے، عمران خان پر سیاسی احتجاج کا الزام ہے مگر وہ ان کا حق ہے، عمران خان اور پی ٹی آئی رہنماؤں کیخلاف دہشتگردی کے مقدمات بنائے جارہےہیں، سیاسی مخالفین کو تنگ کرنے کےلئے ایسے مقدمات بنائے جارہےہیں، پاکستان کی تاریخ سیاسی احتجاج سے بھری پڑی ہے۔

کیس نوازشریف اور مریم نواز کی چودہ چودہ سال سزا کی طرف جارہا ہے

سماعت مین وقفے میں پی ٹی آئی کے ترجمان فواد چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ شریف خاندان کے لیے سزائیں دیوار پر لکھی نظر آرہی ہیں، کیس یقیناً نوازشریف اور مریم نواز کی چودہ چودہ سال سزا کی طرف جارہا ہے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ موٹو گینگ سپریم کورٹ کے باہر بڑی بڑی تقریریں کرتا ہے، شریف خاندان نے عدالت میں قطری خط کے بارے میں کچھ نہیں کہا، کہتے ہیں والیم 10کھولیں تو عدالت نے کہا والیم 10 میں کچھ نہیں،اگر والیم 10 کھلا تو اس کے بھی اثرات آئیں گے آپ چاہتے ہیں تو کھول دیتے ہیں، والیم دس کھلاتو اور بھی بہت سے انکشافات ہوں گے۔

انھوں نے کہا کہ جے آئی ٹی میں آڈیو اور ویڈیو ریکارڈ کے بارے میں بات نہیں ہورہی، کیپٹن صفدرکی آڈیو ویڈیو آنے پر ٹکٹس بلیک میں فروخت ہوں گی تو معلوم ہے پاکستان فلم انڈسٹری کو کتنا فائدہ ہوگا۔

تحریک انصاف کے ترجمان کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی نے1992 اور 1994میں ایف آئی آرز کھولنے کا مطالبہ کیا، شریف خاندان کے وکلانے ایف آئی آرز کھولنے پر اعتراض کیا ہے، ادارے شریف خاندان کے ماتحت ہیں تو تحقیقات شفاف نہیں ہورہی۔

انھوں نے کہا کہ نوازشریف نے جے آئی ٹی کے سامنے خالو کو پہچاننے سے انکار کردیا تھا، ایف زیڈ ای کمپنی کا اعتراف کرلیا گیا ، نوازشریف چیئرمین ہیں، مان لیا گیا اقامہ ایف زیڈای کمپنی کے نام پر حاصل کیا گیا۔

فواد چوہدری کا مزید کہنا تھا کہ پہلے بھی کہا تھا کہ ن لیگ کو منی لانڈرنگ کیلئے استعمال کیا گیا، لندن فلیٹس کیسے حاصل کیے گئے ابھی تک وضاحت نہیں کی گئی، کیلبری فونٹ کے معاملےپر کوئی تردید جاری نہیں کی گئی، شریف خاندان کیس میں تاخیری حربے استعمال کررہا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں