The news is by your side.

Advertisement

”ڈاکٹر رضوان کی قبر کی مٹی نہیں سوکھی اور شریف فیملی کے مقدمات واپس ہونے لگے“

اسلام آباد: سابق وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ ایف آئی اے منی لانڈرنگ کے مقدمات واپس لینے کا ارادہ رکھتی ہے، ابھی ڈاکٹر رضوان کی قبر کی مٹی نہیں سوکھی اور مقدمات واپس ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق عمران خان کی زیرصدارت تحریک انصاف کے مرکزی قائدین کا اجلاس ہوا، جس میں سیاسی صورتحال اور آئندہ کے لائحہ عمل پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس کے بعد پی ٹی آئی کے سینئر نائب صدر فواد چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امپورٹڈ حکومت کے کشمیر کو نظرانداز کرنے کی مذمت کرتے ہیں، کشمیر کو نظر انداز کرکے بھارت کیساتھ تجارت کا فیصلہ قابل مذمت ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کا کشمیر پر اصولی مؤقف ہے، جب تک بھارت غیر قانونی اقدامات واپس نہیں لیتا رابطے بحال نہیں ہوسکتے، امپورٹڈ حکومت کا بھارت کیساتھ روابط بڑھانے کا معاملہ تشویشناک ہے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ سوشل میڈیا پر رپورٹ ہوا کسی وفد نے اسرائیل کا دورہ کیا ہے، جس میں پاکستانی بھی تھا، اسرائیل کیساتھ کسی قسم کے تعلقات پاکستانیوں کو منظور نہیں۔

سابق وفاقی وزیراطلاعات نے کہا کہ ایف آئی اے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے خلاف چلنے والا منی لانڈرنگ کے مقدمات واپس لینے کا ارادہ رکھتی ہے، یہ عوام کے پیسوں کے کیسز ہیں کسی کو حق نہیں کہ واپس لے، مقدمات واپس لینے کے اقدام کی مذمت کرتے ہیں، ڈاکٹررضوان کی قبرکی مٹی نہیں سوکھی اور مقدمات واپس ہونا شروع ہوگئے، انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ سے اپیل ہے اداروں کو تحفظ فراہم کرے۔

یہ بھی پڑھیں: ایف آئی اے شہباز شریف اور حمزہ شریف منی لانڈرنگ کیس کی پیروی سے دستبردار

فواد چوہدری نے کہا کہ حکومت نے سابق وزیراعظم عمران خان کی سیکیورٹی واپس لے لی ہے، جبکہ ایک مجرمہ کو سیکیوٹی دی گئی ہے، مریم نواز کو رینجرز کی سیکیورٹی فراہم کرنا قابل مذمت ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج عمران خان اٹک جلسے میں ایک اہم پیغام دیں گے، حقیقی آزادی مارچ میں لاکھوں لوگ اسلام آباد آنے کو تیار ہیں، یہ ایک ایسا احتجاج ہوگا جس کی مثال ایشیا میں نہیں ملے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں