The news is by your side.

Advertisement

‘ایاز صادق کو نہ اپنی عزت کا احساس ہے نہ ملک کی عزت کا’

اسلام آباد: وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ ہم نے بھارت کو گھس کرمارا اورایازصادق نےکہا کہ ہماری ٹانگیں کانپ رہی تھیں ، کچھ شرم ہوتی ہے کچھ حیا ہوتی ہے، ایاز صادق کو نہ اپنی عزت کا احساس ہے نہ ملک کی عزت کا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ان کی طرح اسپیکرکااحترام بھی لازم ہے ، کچھ لوگ ایوان میں آتےہیں لیکن اسپیکرسےمتعلق پتہ نہیں ہوتا۔

وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کی تحریک غیرآئینی نہیں ہے،احتجاج ان کاحق ہے، پی ڈی ایم کاحق ہےکہ وہ عوام کومہنگائی اوردوائیں مہنگا ہونے کا بتائیں، بتائیں چینی اورآٹےکی قیمتوں میں کمی کیسےکی جاسکتی ہے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ پی ڈی ایم کےتین جلسوں میں تین الگ الگ بیانیےسامنےآئے، اگرکیس کلیئرکردیں تو سارے مسائل ختم ہوجائیں گے، اختلاف کیجیے پی ٹی آئی اورحکومت پرتنقیدکیجیے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے شاہینوں نے ہندوستان کےاندر گھس کر پٹائی کی، بھارتی قیادت پٹائی پر شرمندہ ہےاور یہ کہتے ہیں ہماری ٹانگیں کانپ رہی تھی، کچھ شرم ہوتی ہے کچھ حیا ہوتی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ پلوامہ واقعے کے بعد پاکستان نے بھارتی اقدامات پربھرپور جواب دیا اپوزیشن سے کہوں گا، اپنی اداؤں پر ذرا غور کریں، اختلاف رائے حق ہے مگر ریاست پر تنقید نہیں ہونی چاہیے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ یقین ہے آپ محبت وطن ہیں مگر کئی بار نادانی میں غلطیاں ہوجاتی ہیں، آپ جنوری تو کیا آپ جنوری 2028تک بھی عمران خان کو نہیں بھیج سکتے ، آپ ہمارے ساتھ بیٹھیں معیشت اور الیکٹورل ریفارمز پر بات کریں۔

انھوں نے مزید کہا اس طرح حکومتیں بدلنے کی باتیں کی جارہی ہیں تو ہمیں جنگل کاقانون نہیں بنانا،سابق اسپیکر ایاز صادق کی جانب سے غیرذمہ دارانہ بیان کی توقع نہ تھی، ان کو نہ اپنی عزت کا احساس ہے نہ ملک کی عزت کا۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ اپوزیشن ہمارےساتھ بیٹھےہم بیٹھیں گے، ہم کھلےدل سےآپ کی اورآپ ہماری باتیں سنیں، ایاز صادق اورمحمود اچکزئی کےبیانات نامناسب ہیں۔

فواد چوہدری نے کہا کہ ملک حکمت عملی پر چلتے ہیں خواہشوں پر نہیں ، سیاسی نعرے لگانے سے معاملات حل نہیں ہوتے، عمران خان کو یہ شکست نہیں دے سکتے۔

ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن اپنی سیاست پر نظر ثانی کرے، اختلافات کو بیٹھ کر حل کریں بلیک میلنگ میں نہیں آئیں گے، عمران خان بلیک میلنگ میں نہیں آئیں گے۔

نواز شریف کی واپسی کے حوالے سے وفاقی وزیر نے کہا کہ 15جنوری ابھی دورہےنوازشریف جلدپاکستان واپس آئیں گے، برطانوی ہوم آفس میں نوازشریف سےمتعلق کارروائی شروع ہوگئی ، میرانہیں خیال نوازشریف کو لانے کیلئے وزیراعظم کو لندن جانا پڑے ، برطانیہ کی حکومت خود ہی نوازشریف کوپاکستان بھیج دےگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں