پانامہ کیس کا فیصلہ دو ہفتوں میں ہو جائے گا، فواد چوہدری -
The news is by your side.

Advertisement

پانامہ کیس کا فیصلہ دو ہفتوں میں ہو جائے گا، فواد چوہدری

کراچی : پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان فواد چوہدری نے کہا ہے کہ پانامہ کیس فائنل راؤنڈ میں داخل ہوچکا ہے اورتوقع ہے کہ آئندہ دو ہفتوں میں پانامہ لیکس کے معاملے پر تمام عدالتی کارراوائی مکمل کرلی جائیگی، انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اور ان کے خاندان کے نااہل ہونے سے جمہوریت کو کسی قسم کا نقصان نہیں پہنچے گا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے انصاف ہاؤس کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر ان کے ہمراہ مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل عمران اسماعیل، حلیم عادل شیخ،فردوس شمیم نقوی، جمال صدیقی،عزیز اللہ آفریدی، دواخان صابراور دیگر رہنما بھی موجود تھے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ پانامہ لیکس اسکینڈل کو سات ماہ ہوچکے ہیں اورجو کاغذات مریم نواز کی جانب سے جمع کروائے گئے ہیں ان پر مریم نواز کے دستحط ہی موجود نہیں ہیں یہ ایک سوالیہ نشان ہے۔ فواد چوہدری نے کہا کہ پیر کے روز سے پانامہ لیکس کے حوالے سے دوبارہ عدالتی کارروائی کا آغاز ہوگا۔

تحریک انصاف کے وکیل نعیم بخاری کے دلائل کے بعد نواز شریف کے دلائل کا آغاز ہوگا، اس کیس میں مریم نواز اپنے والد نواز شریف کی فرنٹ مین ہیں اورمریم نواز منروا کمپنی کی بینیفشری ہیں، انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی قومی اسمبلی میں تقاریر اور دیگر بیانات کو اگر دیکھا جائے اور اس کے ساتھ ان کے بچوں کے بیانات کو تو یہ ایک دوسرے سے نہیں ملتے۔

وزیراعظم کو 2006ء سے 93ء تک کے اپنے اثاثوں کے ثبوت پیش کرنا ہوں گے۔ فواد چوہدری نے کہا کہ نواز شریف کے وکیل سلمان اکرم راجہ جو کہ کرپشن اور پانامہ لیکس کے حوالے سے نواز شریف پر سخت تنقید کرتے رہے ہیں وہ کیسے ان کا پانامہ کیس میں دفاع کریں گے؟

ان کا کہنا تھا کہ سرکاری خزانے سے وکلاء کی فیسیں ادا کی جارہی ہے اور حکومت اس معاملے میں سرکاری وسائل کا بے دریغ استعمال کر رہی ہے۔

ایک سوال کے جواب میں فواد چوہدری نے کہا کہ یہ عمران خان کا ذاتی کیس نہیں ہے بلکہ پانامہ لیکس ایک بین الاقوامی معاملہ ہے اورجو اربوں روپے لوٹے گئے وہ عمران خان کے نہیں پوری پاکستانی قوم کے پیسے تھے۔ یہ بات کہنا کہ نواز شریف کی نااہلی سے جمہوریت کو نقصان پہنچے گا غلط ہے۔

ایسا لگتا ہے کہ نواز شریف نے اپنا نام جمہوریت رکھ لیا ہے۔ فواد چوہدری نے کہا کہ تحریک انصاف نے آئندہ کے عام انتخابات کی تیاریوں کاآغاز کردیا ہے۔

عمران خان نے فیصلہ کیا ہے وہ اب سندھ اور کراچی کے معاملات پر خصوصی توجہ دیں گے اور انہوں نے صوبہ سندھ کو فوکس کیا ہوا ہے اور سندھ کے عوام بھی تبدیلی کے لئے عمران خان کی جانب دیکھ رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں