The news is by your side.

ہم اپنا سیاسی داؤ استعمال کریں گے اور حکومت اپنا، فواد چوہدری

پی ٹی آئی کے مرکزی سیکریٹری اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ہم اپنا سیاسی داؤ استعمال کریں گے اور حکومت اپنا کردار ادا کرے گی۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ تحریک انصاف کا ایک ہی مطالبہ ہے اور وہ ہے نئے انتخابات، ہمارا اپنا پوائنٹ آف ویو ہے اور حکومت کا اپنا نقطہ نظر ہے۔ ہم اپنا سیاسی داؤ استعمال کریں گے اور حکومت اپنا کردار ادا کرے گی۔

سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ ہم دو صوبوں میں اسمبلیاں تحلیل کرنے جا رہے ہیں۔ حکومت سمجھتی ہے کہ وہ دونوں صوبوں میں ضمنی انتخاب کرا لے گی تو الگ بات ہے۔ ایسی صورتحال میں اسٹیبلشمنٹ کو چاہیے کہ وہ درمیان میں نہ آئے۔ اسٹیبلشمنٹ نکل جائے اور اختیار سیاستدانوں کو دے تو پھر الگ بات ہوگی۔ موجودہ نظام اسٹیبلشمنٹ نے ہی بنایا ہے وہ نکل جائیں تو یہ نظام گر جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں ہم اسمبلیاں تحلیل کرتے ہیں تو حکومت کے پاس کوئی آپشن ہے ہی نہیں۔ وفاقی حکومت کو چاہیے عام انتخابات کی تاریخ کا اعلان کر کے گفتگو کر لے۔ حکومت الیکشن کی تاریخ کا اعلان کر لے تو پھر کئی چیزیں طے ہو سکتی ہیں۔ سیاستدانوں کے اقدامات کو دیکھ کر ہی عوام ووٹ دیتے ہیں۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ مریم نواز نے ایک مرتبہ استعفوں کا اعلان کیا تھا تو ان کے صرف 2 ممبران نے استعفے بھیجے اور جن دو لوگوں نے استعفے دیے انہوں نے بھی اس کی تصدیق نہیں کی۔ جب کہ عمران خان کی ایک کال پر لوگوں نے استعفےدیے، پہلے کبھی ایسا نہیں ہوا۔

پی ٹی آئی رہنما نے یہ بھی کہا کہ تاثر دیا جا رہا ہے کہ اب شریف یا زرداری فیملی کا کنٹرول بڑھ گیا ہے جو درست نہیں۔ پرویز الہٰی کی آج عمران خان سے ملاقات ہونا تھی لیکن وہ پنڈی چلے گئے تھے۔ سیاستدان آپس میں اکھڑے اکھڑے رہتے ہیں پوری دنیا میں ایسا ہی ہوتا ہے۔ اہم کردار اسٹیبلشمنٹ کا ہوتا ہے کہ وہ کسی پارٹی کی طرف داری نہیں کرے۔

جنرل (ر) قمرجاوید باجوہ کیساتھ اچھا وقت بھی گزرا ہے اور غلطیاں بھی ہوئی ہیں۔ کمانڈ تبدیلی کے بعد ہم سمجھتے ہیں کہ مثبت فرق پڑے گا۔ اعلانات بھی اہم ہیں۔ موجودہ اسٹیبلشمنٹ سے امید ہے کہ وہ سیاسی کردار ادا نہیں کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں