The news is by your side.

Advertisement

وزیراطلاعات پنجاب نے ہندوبرادری سے متعلق بیان پر معذرت کرلی

لاہور : وزیراطلاعات پنجاب  فیاض الحسن چوہان نے ہندوبرادری سےمتعلق بیان پرمعذرت کرتے ہوئے کہا میرا مخاطب بھارتی وزیراعظم، بھارتی فوج اور بھارتی میڈیا تھا، پاکستان میں ہندو اقلیت نہیں۔

.تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیراطلاعات فیاض الحسن چوہان نے ہندو برادری سے متعلق متنازعہ بیان گلے پڑگیا، پارٹی قیادت کا نوٹس وزیر کو معافی کو معافی مانگی پڑگئیں۔

فیاض الحسن چوہان نے اقلیتی برادری کے خلاف بیان پر معافی مانگتے ہوئے کہا پاکستان میں ہندوؤں کی دل آزادی ہوئی ہے تو معذرت خواہ ہوں، میں نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی ، بھارتی افواج اور انڈین میڈیا کو مخاطب کیا تھا، میرے مخاطب پاکستان میں موجود ہندواقلیت نہیں تھے۔

مزید پڑھیں : اقلیتی برادری کیخلاف بیان : فیاض الحسن چوہان کی وزارت خطرے میں پڑگئی

یاد رہے فیاض الحسن چوہان کی جانب سے اقلیتی برادری سے متعلق توہین آمیزگفتگو پر نوٹس لیتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا حکومت ایسے فضول ریمارکس کسی صورت برداشت نہیں کرے گی۔

نعیم الحق نے ٹوئٹ میں کہا وزیراعلیٰ پنجاب سے مشاورت کے بعد فیاض الحسن چوہان کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔

خیال رہے  وزیراطلاعات پنجاب کا کہنا تھا مودی کےاقدامات کی وجہ سےبھارت کوجگ ہنسائی کاسامناکرناپڑا، بھارتی عوام بھی سوچتے ہیں مودی نے الیکشن مہم کیلئے کیا کچھ نہیں کیا، مودی نے جنگی جنون کی وجہ سےاپنی ہی الیکشن مہم کابیڑہ غرق کردیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں