ضرورت پڑنے پر نواز شریف کو پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی منتقل کیاجاسکتاہے ،فیاض الحسن چوہان
The news is by your side.

Advertisement

ضرورت پڑنے پر نواز شریف کو پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی منتقل کیاجاسکتاہے ،فیاض الحسن چوہان

لاہور : وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ نوازشریف کوسروسزاسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے ، ضرورت پڑنے پر ان کو پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی منتقل کیاجاسکتاہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے عجائب گھر میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا نواز شریف کی صحت سے متعلق میڈیکل رپورٹ ملی ہے، انسانی ہمدردی کےتحت نوازشریف کے لئے 3 میڈیکل بورڈ بنائے۔

فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کوسروسز اسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے، مسلم لیگ ن کے رہنماسروسز اسپتال پر بھی اعتراض اٹھا رہے ہیں ، سروسز اسپتال میں نوازشریف کے تمام ٹیسٹ کیے جائیں گے۔

مریم نوازاورآل شریف پروپیگنڈاکررہےتھےکہ بہترسلوک نہیں کیاجارہا

وزیراطلاعات پنجاب نے کہا پی آئی سی سروسز کے بالکل ساتھ ہے، ضرورت پڑنے پر وہاں منتقل کیاجاسکتاہے ، مریم نوازاورآل شریف پروپیگنڈا کررہے تھے کہ  بہترسلوک نہیں کیاجارہا، نوازشریف کو کھانے پینے اور ملنے جلنے سمیت تمام سہولتیں دی گئیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پنجاب حکومت نےایک فیصدبھی تعصب کامظاہرہ نہیں کیا، سروسزاسپتال میں نوازشریف کےتمام ٹیسٹ کرائےجائیں گے اور ان کو رو بصحت ہونے پر دوبارہ جیل منتقل کیاجائےگا۔

مزید پڑھیں : وزیراعلیٰ پنجاب نے نوازشریف کواسپتال منتقل کرنےکی منظوری دے دی

خیال رہے وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے سابق وزیر اعظم نوازشریف کو فوری اسپتال منتقل کرنے کی منظوری دے دی ہے‌‌۔

محکمہ داخلہ پنجاب کا کہنا ہے کہ نوازشریف کے ٹیسٹ سروسز اسپتال میں ہوں گے، انہیں کچھ دیر میں سروسز اسپتال منتقل کیا جا رہا ہے، سینئر پروفیسرز کی رپورٹ پر نوازشریف کو اسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا، جب تک ان کے ٹیسٹ مکمل نہیں ہوتے وہ اہسپتال میں ہی رہیں گے۔

نواز شریف کی سروسز ہسپتال منتقلی کے احکامات جاری ہوتے ہی پولیس نے نواز شریف کیلئے مختص کمرے کا جائزہ لیا اور سکیورٹی کی حکمت عملی بھی طے کرلی ہے۔

یاد رہے سابق وزیر اعظم دل کے عارضہ میں مبتلا ہیں، ای سی جی، کارڈیوگرافی اور دیگر ٹیسٹ کی تسلی بخش رپورٹ نہ آنے پر اسپتال میں داخل کرنے کی سفارش کی گئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں