site
stats
سندھ

پارلیمنٹ سے مستعفی ہونے والے آج استعفی مانگ رہے ہیں، فضل الرحمان

کراچی : جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم کو مشورہ دیا ہے کہ وہ کسی صورت استعفیٰ نہ دیں کیونکہ مسئلہ پاناما کا نہیں، پاکستان کو اقتصادی پرواز سے روکنے کا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت کے اہم اتحادی مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم کو استعفی نہ دینے اور دباؤ کا مطالبہ کرتے ہوئے ڈٹ جانے کا مشورہ دے دیا۔

پیپلز پارٹی پر تعجب ہے، خورشید آج جمہوریت مخالفین کے ساتھ بیٹھے ہیں

کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مجھے پیپلز پارٹی پر تعجب ہورہا ہے، خورشید شاہ کل جن لوگوں سے جمہوریت کو بچا رہے تھے آج ان ہی کے ساتھ بیٹھے ہیں، جےآئی ٹی رپورٹ بس رپورٹ ہے، جزوی طور پر صحیح اورغلط بھی ہوسکتی ہے۔

دھرنے کے نام پر دو حملے اوراب یہ تیسرا حملہ

ان کا کہنا تھا کہ یہ حکومت پر تیسراحملہ ہے، اس سے پہلے دھرنے کے نام پر دو حملے ناکام ہوچکے ہیں، دھرنے ناکام بنا کر سی پیک کا راستہ بنایا ہے، امریکا اوربیرونی قوتیں سی پیک کو سبوتاژ کرنا چاہتی ہیں، اس حوالے سے امریکا اوربھارت گٹھ جوڑ کرچکے ہیں۔

بیرونی اور امریکی پلان کی شروعات ہوچکی

 انہوں نے کہا کہ نئی نسل کے سامنے پرانا کیس کھولیں تو وہ اس کے لیے نیا ہوتا ہے، ہم پاکستان کے روشن مستقبل کے ساتھ کھڑے ہیں، بیرونی اور امریکی پلان کی شروعات ہوچکی ہے۔

چینی صدر کے دورے کے وقت بھی ہنگامے کھڑے کیے گئے

مخالفین کا پلان یہ ہے کہ پاکستان میں سیاسی عدم استحکام پیدا کیا جائے، اس کے لیے سی پیک منصوبے کو سبوتاژ کرنے کا پلان تیار کیا گیا ہے، حالات کاوسیع تجزیہ کرنا ہوگا، چینی صدرکے دورے کےوقت بھی ہنگامے کھڑے کیے گئے تھے۔

پارلیمنٹ سے مستعفی ہونے والے آج کیسے استعفیٰ  مانگ رہے ہیں

انہوں نے کہا کہ استعفیٰ دینے والے آج بھی پارلیمنٹ کے ارکان ہیں، استعفے دینے والوں کے ہاتھوں پارلیمنٹ کی بےعزتی کی جارہی ہے، پارلیمنٹ سے استعفے دینے والے کیسے استعفیٰ مانگ رہے ہیں؟

خیبر پختونخوا میں کرپشن کا ذکر کیوں نہیں کیا جارہا؟

ان کا کہنا تھا کہ خیبر پختونخوا میں کرپشن کا ذکر کیوں نہیں کیا جارہا؟ این جی اوز کے ذریعے خیبرپختونخوا کو چلایا جارہا ہے، ٹوئٹس نے اداروں کو فریق بنانے میں کردار ادا کیا ہے۔

جمعیت علمائے اسلام کو حکومت دی جائے تو کرپشن ختم ہو جائے گی

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ جمعیت علمائے اسلام کو حکومت دی جائے تو کرپشن ختم ہو جائے گی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم کو تنہا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، ملک مزید کسی بحران کا متحمل نہیں ہوسکتا۔

آج جو کچھ ہورہا ہے کل اس پر آپ رو رہے ہوں گے

جے آئی ٹی پر اعتماد کرنا فریقین کا کام ہے،انہوں نے اعتماد نہیں کیا، نا اہل قراردینا عوام کی مرضی نہیں،ان کاکام منتخب کرنا ہے، آج جو کچھ ہورہا ہے کل اس پر آپ رو رہے ہوں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top