پی ٹی آئی کا سربراہ تبدیل کردیں، سب ٹھیک ہوجائے گا، فضل الرحمان -
The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی کا سربراہ تبدیل کردیں، سب ٹھیک ہوجائے گا، فضل الرحمان

لاہور : جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ پاناما کیس کی جے آئی ٹی متنازع ہوچکی ہے، اس کی رپورٹ پر عدالت کیا فیصلہ دے گی؟ عمران خان کے بیانات پرکیا تبصرہ دیں سمجھ نہیں آتا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور میں جمعیت علمائے اسلام ف کی مرکزی عمومی کونسل کے اجلاس کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

مولانا فضل الرحمان نے پاناما کیس کے حوالے سے کہا کہ جو کچھ ہو رہا ہے عدالت کے دائرے میں ہو رہا ہے لیکن جے آئی ٹی متنازع بن چکی ہے اور اس کی متنازع رپورٹ کے عدلیہ پر کیا اثرات پڑیں گے، یہ سارے سوالات ابھی تک موجود ہیں۔

مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ دھرنوں کے دوران ثالث کا کردار ادا نہیں کیا تھا بلکہ میاں نواز شریف کے ساتھ کھڑے تھے، ایک صحافی نے سوال کیا کہ اگر وزیر اعظم نواز شریف کو نااہل کردیا جاتا ہے تو آپ کہاں کھڑے ہونگے؟ اس سوال پر مولانا فضل الرحمن ناراض ہو گئے اور سوالات کے جواب دیئے بغیر چلے گئے۔

انہوں نے سربراہ تحریک انصاف عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کے بیانات پرکیا تبصرہ دیں سمجھ نہیں آتا۔

مولانا فضل الرحمن نے پنجاب اسمبلی میں چیئرمین کشمیر کیمٹی کو ہٹائے جانے کے سوال پر کہا کہ کشمیر کمیٹی کو نہیں پی ٹی آئی کے سربراہ کو تبدیل کردیں سب خیرخیریت ہوجائے گی، سازشوں کا کہنے والے بتائیں ملک میں ہورہی ہے یا باہر؟


مزید پڑھیں: فاٹا اصلاحات کا بل منظور نہیں ہونے دینگے، فضل الرحمان


ایک سوال کے جواب میں مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ کشمیر پر ہمارا مؤقف واضح ہے، کشمیری بھائیوں کےشانہ بشانہ ہیں، کشمیری بھائیوں کے حق خود ارادیت کی مکمل حمایت کرتے ہیں، برہان وانی کو بے دردی کے ساتھ شہید کیا گیا تھا جوانتہائی قابل مذمت ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں