The news is by your side.

Advertisement

مولانا فضل الرحمان کی بابری مسجد کیس کے فیصلے کی مذمت

اسلام آباد : جمیعت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے کی مذمت کرتے ہوئے کہا فیصلہ تنگ نظری کی عکاسی کرتا ہے جبکہ سراج الحق نے بابری مسجد پر فیصلے کو انسانی عدالتی تاریخ کا بدترین فیصلہ قرار دیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی سپریم کورٹ کی جانب سے بابری مسجد کیس کے فیصلے پر جمیعت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے کی مذمت کرتے ہیں، فیصلہ تنگ نظری کی عکاسی کرتا ہے ، بھارت اقلتیوں کےحقوق کے تحفظ میں بری طرح ناکام ہے۔

دوسری جانب امیر جماعت اسلامی سراج حق نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر بابری مسجد کیس کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا بھارتی سپریم کورٹ نے ہندو عدالت ہونےکا ثبوت دیا ، بابری مسجدپر انسانی عدالتی تاریخ کا بدترین فیصلہ سنایا گیا، دیدہ دلیری سے انصاف کا قتل ہوا،بھارت کےلیے بھیانک نتائج نکلیں گے۔

واضح رہے کہ بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد کی متنازع زمین ہندوؤں کو دینے کا فیصلہ سناتے ہوئے کہا بھارتی حکومت کی زیرنگرانی بابری مسجد کی جگہ مندر بنے گا اور مسلمانوں کو ایودھیا میں متبادل جگہ دی جائے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں