The news is by your side.

دادو: میہڑ، خیرپور ناتھن شاہ اورجوہی ڈوبنے کا خطرہ ، شہر خالی کرالئے گئے

دادو: ڈپٹی کمشنر دادو نے میہڑ ،خیر پور ناتھن شاہ اور جوہی کے ڈوبنے کے خطرے کے پیش نظر شہر خالی کرالئے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ میں سیلاب کے بعد بیشتر شہروں میں نظام زندگی درہم برہم ہوگیا ہے ، مکین بے گھر ہوگئے اور کھلے آسمان تلے بیٹھے متاثرین کے لیے ہر گزرتا دن اذیت ناک ہونے لگا ہے۔

دادو میں سیلابی پانی میں میہڑ ،خیر پور ناتھن شاہ اور جوہی کے ڈوبنے کا خطرہ ہے ، جس کے پیش نظر ڈپٹی کمشنر دادو نے شہر خالی کرنے کا الرٹ جاری کردیا ہے۔

جس میں کہا گیا ہے کہ شہری محفوظ مقامات پر منتقل ہو جائیں۔

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر دادو کو بھی خطرات لاحق ہیں، جس کے بعد شہریوں میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے۔

دوسری جانب دادو کے کچے کے سیلابی پانی میں ڈوب کردو خواتین جاں بحق ہوگئیں۔

گاؤں فرید خشک میں سیلابی پانی کی وجہ سے کشتی نہ ملنے پر دونوں خواتین پیدل نکلیں ،دونوں خواتین جامل خشک اور نازل خشک پانی میں ڈوب گئیں ، دونوں خواتین کی لاشیں مقامی لوگوں نے پانی سے نکال لیں۔

خیال رہے سندھ میں سیلاب کے باعث خیرپور شہر سے صرف دس کلومیٹر دور قومی شاہراہ کے قریب پچاس سے زائد دیہات زیر آب آگئے۔

خیرپور سے دیہات زمینی طور پر کٹ گئے ہیں اور سیلاب سے متاثرہ افراد کے لیے خوراک کی شدید قلت پیدا ہوگئی۔

متاثرین کا کہنا ہے کہ انتظامیہ نے تاحال علاقے میں کوئی ریسکیو آپریشن شروع نہیں کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں