The news is by your side.

Advertisement

سابق وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کی مشکلات میں اضافہ

کراچی : قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق وزیراعلی سندھ سید قائم علی شاہ کو غیرقانونی بھرتیوں پر کال اپ نوٹس بھیج دیا تاہم عدالت نے نیب کو قائم علی شاہ کو گرفتار کرنے سے روک دیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ، نیب کی جانب سے قائم علی شاہ کے خلاف ایک اور انکوائری کا آغاز کرتے ہوئے غیرقانونی بھرتیوں پر ان کو کال اپ نوٹس بھیج دیا۔

جس کے بعد قائم علی شاہ نےگرفتاری سے بچنے کے لیے درخواست ضمانت دائر کردی اور مؤقف اختیار کیا کہ گرفتاری کاخدشہ ہے، ضمانت دی جائے۔

بعد ازاں سندھ ہائی کورٹ میں سابق وزیر اعلی سندھ قائم علی شاہ کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی ، بیریسٹر ضمیر گھمرو نے عدالت کو بتایا نیب نے محکمہ اطلاعات میں غیر قانونی بھرتیوں پر قائم علی شاہ کو کال اپ نوٹس بھیجا ہے، جن بھرتیوں کی انکوائری نیب کر رہا ہے انکو عدالتی حکم پر ریگیولر کیا گیا تھا۔

عدالت نے غیر قانونی بھرتیاں اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے معاملے پر سابق وزیراعلی سندھ سید قائم علی شاہ کی ایک اور نیب انکوائری میں عبوری ضمانت منظور کرلی ہے،

عدالت نے سابق وزیر اعلی سندھ قائم علی شاہ کی ایک لاکھ روپے کے عوض ضمانت منظور کرتے ہوئے آئندہ سماعت تک نیب حکام کو گرفتاری سے روک دیا جبکہ درخواست پر نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 7 اپریل تک جواب طلب کرلیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں