The news is by your side.

Advertisement

وفاقی کابینہ نے ای سی ایل کمیٹی کے قیام کی منظوری دیدی

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا پہلا اجلاس ہوا جس میں ای سی ایل کمیٹی کے قیام کی منظوری دی گئی ہے۔

اے آر وائی نیوز نے وزیراعظم کی زیرصدارت کابینہ کے پہلے اجلاس کی اندورنی کہانی سے متعلق خبر حاصل کرلی ہے۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ وفاقی کابینہ نے ای سی ایل کمیٹی کے قیام کی منظوری دیدی ہے اور آج کے بعد کسی بھی شخص کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے نام کی منظوری یہ کمیٹی ہی دے گی۔

ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں وزیراعظم شہباز شریف کو ملک کی معاشی صورتحال پر تفصیلی بریفنگ دی گئی اور بتایا گیا کہ پی ٹی آئی کی سابق حکومت میں ڈیزل، پٹرول پرسبسڈی سے قومی خزانے کو 67 ارب روپے کا نقصان ہوا، ڈیزل پر 52 روپے فی لیٹر جب کہ پٹرول پر 22 روپے فی لیٹر کا نقصان برداشت کرنا پڑا۔

ذرائع نے بتایا کہ وزیراعظم کو آگاہ کیا گیا کہ پیٹرول،ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کی منظوری عمران خان نے دی تھی اور اس سلسلے میں ایف بی آر، وزارت خزانہ کی تجاویز کو نظر انداز کردیا گیا تھا۔

اجلاس کو یہ بھی بتایا گیا کہ 18-2017میں جی ڈی پی گروتھ ریٹ 6.1 فیصد تھی جبکہ 22-2021میں جی ڈی پی گروتھ صرف 4 فیصد تھی۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں تاریخ کے سب سے بڑے مالی خسارے کا تخمینہ لگایا گیا ہے اور یہ تخمینہ تقریباً5600ارب روپے کے مالی خسارے کا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں