The news is by your side.

Advertisement

وفاقی کابینہ نے نیشنل ٹیرف پالیسی کی منظوری دیدی

اسلام آباد: معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وفاقی کابینہ نے نیشنل ٹیرف پالیسی کی منظوری دے دی ہے جب کہ عوام کو ریلیف دینےکی پالیسیوں کوتیز کرنےکی ہدایت کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے وفاقی کابینہ میں ہونے والے فیصلوں سے متعلق میڈیا کو آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ آج کابینہ اجلاس میں 8 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا،4سال بعد پہلی بار کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں کمی آئی ہے جس پر وزیر اعظم عمران خان نے معاشی ٹیم کو مبارکباد دی۔

معاون خصوصی نے کہا کہ معاشی اعدادوشمار میں بہتری سے سرمایہ کاروں کااعتمادبحال ہواہے، معاشی اعدادوشمار میں بہتری معاشی ٹیم کی کاوشوں کا ثمر ہے اور حکومتی پالیسیوں کا اصل فائدہ عوام تک پہنچےگا، عوام کو ریلیف دینےکی پالیسیوں کوتیز کرنےکی ہدایت کی گئی ہے اور پاکستان کی برآمدات میں اضافے کیلئے ہر قدم اٹھایاجائےگا۔

انہوں نے بتایا کہ رضوان بھٹی کوانڈسٹریل ڈیولپمنٹ کارپوریشن کاچیئرمین اور رضا عباس پاکستان انجینئرنگ بورڈ کا چیف ایگزیکٹو بورڈتعینات کیا گیا، کابینہ نے متبادل توانائی پالیسی کی منظوری بھی دی ، 2006 میں پہلی متبادل توانائی پالیسی منظور ہوئی تھی، کابینہ نے اسی سی سی کے فیصلوں کی توثیق کی جب کہ جی سی سی فیصلوں کی باضابطہ منظوری اورکمیٹی قائم کی گئی ہے۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ نیشنل ٹیرف پالیسی کی بھی کابینہ نے منظوری دے دی ہے، 27وزارتوں کے اداروں نے 134خالی آسامیوں پر بریف کیا جب کہ 87 اسامیوں پر ایڈیشن چارج دیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ عمررسیدہ اورمعمولی جرائم کےقیدیوں کاڈیٹاصوبائی حکومتوں سےطلب کیاگیا ہے اور معمولی جرائم کےقیدیوں کاڈیٹاجمع کرنےکی ہدایت کی گئی ہے۔

معاون خصوصی کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کا نعرہ ہےدونہیں ایک پاکستان،یہ نعرہ پورا کرنے کیلئے قوانین مؤثر بنانے کی ضرورت ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں